13.3 C
Islamabad
بدھ, مارچ 3, 2021

تھرپارکر این اے 221 میں ایک مرتبہ پھر پیپلز پارٹی امیدوار نے میدان مار لیا

تازہ ترین

شاہد آفریدی کی ‘برتھ ڈے ٹوئٹ’، کہیں ریکارڈ نہ بدل جائے؟

شاہد آفریدی نے 25 سال پہلے اپنی پہلی ون ڈے اننگز میں صرف 37 گیندوں پر سنچری بنائی تھی، جو کرکٹ تاریخ کی تیز...

یوسف رضا گیلانی کو سینیٹ انتخابات میں فتح ہوگی، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن رہنما اور قائد حزب اختلاف پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف میں اپنے ہی اراکین...

بھارت سے کپاس کی درآمد کا امکان، ٹیکسٹائل ملز ناخوش

لائن آف کنٹرول پر سیزفائر معاہدے کی بحالی کے بعد پاک-بھارت تعلقات کی مرحلہ وار بحالی کا امکان ہے اور ہو سکتا ہے کہ...

پاکستان اضافی بجلی سے بٹ کوائن بنا کر اپنا تمام قرضہ اتار سکتا ہے

حکومتِ پاکستان کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک کی ضرورت سے زیادہ بجلی پوری ہو رہی ہے تو آخر پاکستان بٹ کوائن مائننگ...
- Advertisement -

تھرپارکر کی قومی اسمبلی کی نشست این اے 221 کے ضمنی انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی نے میدان مار لیا۔ غیر سرکاری نتائج کے مطابق ضمنی انتخابات میں پیپلزپارٹی نے تحریک انصاف کو 52 ہزار سے زائد ووٹوں سے شکست دی ہے۔

این اے 221 حلقے میں صبح 8 بجے سے شام 5 بجے تک ووٹرز نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔ ضمنی انتخاب میں پیپلزپارٹی کے امیر علی شاہ اور تحریک انصاف کے نظام الدین راہموں سمیت 12 امیدوار مد مقابل تھے۔ 2018 کے عام انتخابات میں این اے 221 سے پیپلز پارٹی کے پیر نور محمد شاہ جیلانی کامیاب ہوئے تھے تاہم چند ماہ قبل یہ نشست ان کے انتقال کے باعث خالی ہوگئی تھی۔حلقے کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق این اے 221 کے ضمنی انتخاب میں ایک لاکھ 3 ہزار 502 ووٹ لے کر پیپلز پارٹی کے امیدوار امیر علی شاہ پہلے نمبر پر رہے جبکہ 50 ہزار 570 ووٹ لے کر پی ٹی آئی کے امیدوار نظام الدین راہموں دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 221 میں کامیابی پر پیپلز پارٹی امیدوار امیر علی شاہ کا کہنا تھا کہ وہ ایم این اے بن کر علاقے کے مسائل کے حل پر توجہ دیں گے اور سیاسی مخالفین بھی ان کے دوست ہیں۔ امیدوار امیر علی شاہ جیلانی کے بھاری اکثریت سے کامیاب ہونے پر جیالوں نے خوشی میں جشن منایا اور ڈھول کی تھاپ پر رقص کیا۔

واضح رہے کہ سال 2018 کے عام انتخابات میں بھی اس نشست پر پیپلزپارٹی کے امیدوار پیرنور محمد شاہ جیلانی نے تحریک انصاف کے امیدوار شاہ محمود قریشی کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی تھی۔ دوسری طرف حلقہ این اے 221 تھرپار کے ضمنی انتخابات میں پولنگ کے دوران قیصرار سمون میں کچھ شرپسندوں کی جانب سے پولنگ اسٹیشن کو آگ لگادی گئی تھی جس سے پولنگ اسٹیشن میں موجود سامان جل گیا تھا۔ ضمنی انتخاب سے متعلق شکایات کے لیے الیکشن کمیشن نے شکایاتی سیل بھی قائم کیا تھا۔ چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے حکم دیتے ہوئے یہ بھی کہا گیا تھا کہ چیف سیکریٹری اور آئی جی سندھ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر ملوث عناصر کے خلاف بلاتفریق کارروائی کریں۔

مزید تحاریر

شاہد آفریدی کی ‘برتھ ڈے ٹوئٹ’، کہیں ریکارڈ نہ بدل جائے؟

شاہد آفریدی نے 25 سال پہلے اپنی پہلی ون ڈے اننگز میں صرف 37 گیندوں پر سنچری بنائی تھی، جو کرکٹ تاریخ کی تیز...

یوسف رضا گیلانی کو سینیٹ انتخابات میں فتح ہوگی، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن رہنما اور قائد حزب اختلاف پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف میں اپنے ہی اراکین...

بھارت سے کپاس کی درآمد کا امکان، ٹیکسٹائل ملز ناخوش

لائن آف کنٹرول پر سیزفائر معاہدے کی بحالی کے بعد پاک-بھارت تعلقات کی مرحلہ وار بحالی کا امکان ہے اور ہو سکتا ہے کہ...

پاکستان اضافی بجلی سے بٹ کوائن بنا کر اپنا تمام قرضہ اتار سکتا ہے

حکومتِ پاکستان کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک کی ضرورت سے زیادہ بجلی پوری ہو رہی ہے تو آخر پاکستان بٹ کوائن مائننگ...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے