23.3 C
Islamabad
منگل, اپریل 13, 2021

‏41 سال بعد بالآخر قاتل پکڑا گیا

تازہ ترین

ڈسکہ انتخاب کے بعد عوام بھی کہہ رہی ہے کہ گھر جاؤ، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن کے نائب صدر میاں حمزہ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کے پاس اقتدار میں رہنے کا اب...

سندھ حکومت نے سعید غنی سے تعلیم کا قلمدان واپس لینے کا فیصلہ کرلیا

سندھ کی صوبائی حکومت میں وزیر تعلیم و لیبر سعید غنی سے محکمہ تعلیم کا قلمدان لینے کا فیصلہ کرلیا گیا، ساتھ ہی کابینہ...

ن لیگ کو چاہیے کہ پیپلز پارٹی جیسی سیاست کرے، فواد چودھری

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن احتجاجی سیاست سے باہر آکر پیپلز پارٹی جیسی سیاست...

پیپلز پارٹی کو نوٹس مسلم لیگ ن نے نہیں، پی ڈی ایم نے بھیجا تھا، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ جس کے لیے کہا جاتا تھا کہ سیاست ختم ہوگئی اس...
- Advertisement -

‏1979ء میں ایک خاتون کے ریپ اور قتل میں ملوث شخص ڈی این اے ڈیٹابیس کی مدد سے بالآخر پکڑا گیا۔

امریکی ریاست کنساس میں ایک ایسے شخص کو گرفتار کیا گیا ہے جس کا تعلق 1979ء میں کولوراڈو میں ایک خاتون کے قتل سے ثابت ہوا ہے۔ 64 سالہ جیمز ہرمن ڈائی کو ایک خاتون جو ایولن کے ڈے کے قتل پر گرفتار کیا گیا ہے جنہیں نومبر 1979ء میں ریپ کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کیا گیا تھا۔ وہ اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں یہ تک کہہ چکے ہیں کہ وہ خاتون کو جانتے تک نہیں اور اس قتل میں ان کا کوئی ہاتھ نہیں ہے۔

خاتون کی عمر قتل کے وقت 29 سال تھی اور وہ ایک مقامی کالج میں رات کے اوقات میں کام کرتی تھیں۔ انہیں آخری بار 26 نومبر 1979ء کی رات 10 بجے چند طلبہ نے کیمپس کی پارکنگ میں دیکھا تھا لیکن گھر نہ پہنچنے پر اگلے روز ان کے شوہر نے گمشدگی کی اطلاع پولیس کو دی۔ اسی روز شام ساڑھے 5 بجے خاتون کے دفتری ساتھیوں کو ان کی گاڑی ملی جس کے پچھلے حصے میں ان کی لاش پڑی تھی۔ خاتون کو اوور کوٹ کے بیلٹ سے گلا گھونٹ کر مارا گیا تھا۔

حکام نے شواہد جمع کیے اور معاملے پر کچھ پیشرفت بھی ہوئی لیکن کبھی کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی اور یہ گزشتہ سال ایک نجی سراغ رساں نے مطالبہ کیا کہ وہ ڈی این اے شواہد جمع کرے اور اسے کمبائنڈ ڈی این اے انڈیکس سسٹم سے ملائے۔ یہ ایک ایسا ڈیٹا بیس ہے جو قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہزاروں ڈی این اے پروفائلز چیک کرنے کی اجازت دیتا ہے۔  ڈی این اے نمونے مقتولہ کے کوٹ کی آستین اور ان کے ناخنوں سے حاصل کیے گئے۔

نجی سراغ رساں نے یہ بھی پتہ چلایا کہ جیمز ڈائی ایک طالب علم کی حیثیت سے 1979ء میں کالج میں داخل بھی ہوئے تھے۔

معاملہ سامنے آنے کے بعد 22 مارچ کو چند پولیس اہلکاروں نے جیمز کا انٹرویو لیا، جس میں انہوں نے یہ تک کہا کہ وہ خاتون کو جانتے تک نہیں۔

مزید تحاریر

ڈسکہ انتخاب کے بعد عوام بھی کہہ رہی ہے کہ گھر جاؤ، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن کے نائب صدر میاں حمزہ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کے پاس اقتدار میں رہنے کا اب...

سندھ حکومت نے سعید غنی سے تعلیم کا قلمدان واپس لینے کا فیصلہ کرلیا

سندھ کی صوبائی حکومت میں وزیر تعلیم و لیبر سعید غنی سے محکمہ تعلیم کا قلمدان لینے کا فیصلہ کرلیا گیا، ساتھ ہی کابینہ...

ن لیگ کو چاہیے کہ پیپلز پارٹی جیسی سیاست کرے، فواد چودھری

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن احتجاجی سیاست سے باہر آکر پیپلز پارٹی جیسی سیاست...

پیپلز پارٹی کو نوٹس مسلم لیگ ن نے نہیں، پی ڈی ایم نے بھیجا تھا، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ جس کے لیے کہا جاتا تھا کہ سیاست ختم ہوگئی اس...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے