25.7 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

سینیٹ میں کسی ممبر کی بلیک میلنگ نہیں چلے گی، شبلی فراز

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شبلی فراز کا کہنا ہے کہ سینیٹر فارق ایچ نائیک، سینیٹر مشتاق احمد سے زیادہ بہتر قانون جانتے ہیں، اگر قائمہ کمیٹیوں کو عزت نہیں دینی تو کمیٹیوں کی تشکیل کا ایجنڈا ختم کردیں۔

عالمی وبا کورونا کی صورتحال اور کورونا سے بچاؤ کی ویکسین سے متعلق قرارداد سینیٹ اجلاس میں پیش کی گئی، قرارداد جے یو آئی ف کے کامران مرتضیٰ نے پیش کی۔ حکومت نے کورونا سے متعلق قرارداد کی تحریر پر اعتراض کیا۔ وزیر مملکت پارلیمانی امور علی محمد خان کا کہنا تھا کہ کورونا قومی مسئلہ ہے اس پر سیاست نہ کی جائے، قرارداد میں الفاظ پر اعتراض ہے۔

سینیٹ کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ یہاں کسی ممبر کی بلیک میلنگ نہیں چلے گی۔ اگر حزب اختلاف یہ ثابت کرنا چاہتی ہے کہ سیاست نہیں کھیل رہی تو ضروری ہے کہ ملک کی بہتری کے لیے اصولی فیصلے کرے۔ اس طرح کل کو کوئی بھی کھڑا ہوکر یہ کہہ سکتا ہے کہ میں ان الفاظ کو نہیں مانتا۔

شبلی فراز نے کہا کہ یہ جماعتیں جو پارلیمان کے بنیادی قواعد کو نہیں جانتیں کہ پارلیمان میں ہر ایک چیز پر بحث نہیں کی جاسکتی۔ اسٹینڈنگ کمیٹیز اسی لیے بنتی ہیں جہاں ہر جماعت کے نمائندے موجود ہوتے ہیں۔ میں سمجھتا ہوں کہ سینیٹر فاروق نائیک صاحب، مشتاق احمد سے زیادہ اہل ہیں، فاروق ایچ نائیک قانون کو ان سے زیادہ سمجھتے ہیں۔

اس سے قبل اپنے ایک بیان میں سینیٹر شبلی فراز نے کہا وزیر خزانہ حماد اظہر بہترین ہیں، امید ہے ان کی وزارت میں مسائل حل ہوں گے۔ مجھے وزیراعظم عمران خان جو بھی وزارت دیں گے قبول کروں گا، وزیر اطلاعات ٹف جاب ہے، میں نے بخوبی ذمہ داری انجام دی ہے۔

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے