27.7 C
Islamabad
بدھ, مئی 19, 2021

وزیر اعظم نے یقین دہانی کرائی ہے کہ انصاف ہوگا، جہانگیر ترین

تازہ ترین

تین سال بعد ژوب کے لیے پروازوں کا آغاز

تقریباً تین سال بعد پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز نے کراچی اور ژوب کے درمیان پروازوں کا آغاز کر دیا ہے۔ اس سلسلے کی پہلی پرواز...

کرونا وائرس کے بعد سمندری طوفان بھی بھارت پہنچ گیا، 24 ہلاک، 100 لاپتہ

بحیرۂ عرب میں سمندری طوفان سے بھارت کے مغربی ساحل پر کم از کم 24 افراد ہلاک اور 100 لاپتہ ہو چکے ہیں۔ ایک ایسے...

مقبوضہ کشمیر، کرونا ویکسین کے حوالے سے بھی امتیازی سلوک کا شکار

‏82 سالہ امینہ بانو بڈگام کے ایک سرکاری ہسپتال کے ویکسینیشن روم میں موجود ہیں تاکہ کووِڈ-19 کی ویکسین کا پہلا ٹیکا لگوا سکیں...

گوانتانامو کے معمر ترین پاکستانی قیدی کی رہائی کا امکان روشن ہو گیا

پاکستان سے تعلق رکھنے والے 73 سالہ سیف اللہ پراچہ بدنامِ زمانہ گوانتانامو قید خانے کے سب سے عمر رسیدہ قیدی ہیں۔ بالآخر 16...
- Advertisement -

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی طرف سے انہیں یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ وہ خود ان معاملات کو دیکھیں گے، ہم تحقیقات سے کبھی نہیں بھاگتے، ہم نے کبھی نہیں کہا کہ کیس ختم کردو۔

لاہور عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان سے میرا رشتہ کمزور نہیں ہوا، عمران خان کے ساتھ کھڑا ہوا تو پاکستان مسلم لیگ ن  نے میرے کاروبار کی چھان بین کرائی تھی۔ موجودہ دور میں سول کیس کو فوجداری میں تبدیل کیا گیا، ایسا تو ن لیگ نے بھی نہیں کیا تھا۔

جہانگیر ترین نے اپنے خلاف درج ایف آئی آر کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ بناوٹی ایف آئی آرز ہیں، ان میں کوئی چیز ایف آئی اے کی نہیں ہے۔ یہ سب ایس ای سی پی اور ایف بی آر کے کیسز ہیں۔ کوئی مدعی شیئر ہولڈرز میں نہیں سب مجھ سے خوش ہیں، یہ فوجداری مقدمہ نہیں ہے۔

حکومت کی طرف سے بنائی گئی کمیٹی سے متعلق سوال کے جواب میں پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ کمیٹی کی خبر ٹی وی پر سنی۔ چالیس ارکان میرے ساتھ ہیں، جب دوستوں کو بلایا جاتا ہے تو گروپ سے مشورہ کرکے جاتے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے واضح کیا کہ پیپلز پارٹی یا مسلم لیگ ن سے اس دوران کوئی رابطہ نہیں ہوا۔

جہانگیر ترین نے مزید کہا میرا کیس کرمنل نہیں ہے، امید ہے علی ظفر وزیراعظم کو اچھی رپورٹ دیں گے۔ اس کیس کے لیے وزیراعظم عمران خان نے علی ظفر کی ڈیوٹی لگائی ہے۔ وزیر اعظم نے یقین دہانی کرائی ہے کہ انصاف ہوگا، یہاں ایف آئی اے کا کوئی رول نہیں ہے۔ ہم تحقیقات سے کبھی نہیں بھاگتے، ہم نے کبھی نہیں کہا کہ کیس ختم کر دو، ایسی ہلکی باتیں کرنا ہمیں سوٹ نہیں کرتا۔

اس سے قبل لاہور کی مقامی عدالت میں جہانگیر ترین کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی۔ جہانگیر ترین اور ان کے صاحبزادے علی ترین عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کو گرفتار کرنے سے روکنے کا حکم جاری کرتے ہوئے ان کی ضمانت میں 19 مئی تک توسیع کردی۔

دوران سماعت معزز جج نے اس موقع پر پراسیکیوٹر سے پوچھا کہ ان دونوں شخصیات کے خلاف کیس کے بارے میں آگاہ کیا جائے۔ جواب دیتے ہوئے پراسیکیوٹر نے بتایا کہ ان کے خلاف مقدمات کی تفتیش شفاف انداز میں نہیں ہورہی۔ عدالت کی جانب سے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم (جے آئی ٹی) کی رپورٹ بھی طلب کی گئی۔

مزید تحاریر

تین سال بعد ژوب کے لیے پروازوں کا آغاز

تقریباً تین سال بعد پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز نے کراچی اور ژوب کے درمیان پروازوں کا آغاز کر دیا ہے۔ اس سلسلے کی پہلی پرواز...

کرونا وائرس کے بعد سمندری طوفان بھی بھارت پہنچ گیا، 24 ہلاک، 100 لاپتہ

بحیرۂ عرب میں سمندری طوفان سے بھارت کے مغربی ساحل پر کم از کم 24 افراد ہلاک اور 100 لاپتہ ہو چکے ہیں۔ ایک ایسے...

مقبوضہ کشمیر، کرونا ویکسین کے حوالے سے بھی امتیازی سلوک کا شکار

‏82 سالہ امینہ بانو بڈگام کے ایک سرکاری ہسپتال کے ویکسینیشن روم میں موجود ہیں تاکہ کووِڈ-19 کی ویکسین کا پہلا ٹیکا لگوا سکیں...

گوانتانامو کے معمر ترین پاکستانی قیدی کی رہائی کا امکان روشن ہو گیا

پاکستان سے تعلق رکھنے والے 73 سالہ سیف اللہ پراچہ بدنامِ زمانہ گوانتانامو قید خانے کے سب سے عمر رسیدہ قیدی ہیں۔ بالآخر 16...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے