27.7 C
Islamabad
بدھ, مئی 19, 2021

بل اور میلنڈا گیٹس کی دولت کتنی؟

تازہ ترین

تین سال بعد ژوب کے لیے پروازوں کا آغاز

تقریباً تین سال بعد پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز نے کراچی اور ژوب کے درمیان پروازوں کا آغاز کر دیا ہے۔ اس سلسلے کی پہلی پرواز...

کرونا وائرس کے بعد سمندری طوفان بھی بھارت پہنچ گیا، 24 ہلاک، 100 لاپتہ

بحیرۂ عرب میں سمندری طوفان سے بھارت کے مغربی ساحل پر کم از کم 24 افراد ہلاک اور 100 لاپتہ ہو چکے ہیں۔ ایک ایسے...

مقبوضہ کشمیر، کرونا ویکسین کے حوالے سے بھی امتیازی سلوک کا شکار

‏82 سالہ امینہ بانو بڈگام کے ایک سرکاری ہسپتال کے ویکسینیشن روم میں موجود ہیں تاکہ کووِڈ-19 کی ویکسین کا پہلا ٹیکا لگوا سکیں...

گوانتانامو کے معمر ترین پاکستانی قیدی کی رہائی کا امکان روشن ہو گیا

پاکستان سے تعلق رکھنے والے 73 سالہ سیف اللہ پراچہ بدنامِ زمانہ گوانتانامو قید خانے کے سب سے عمر رسیدہ قیدی ہیں۔ بالآخر 16...
- Advertisement -

بل گیٹس کا نام تو ٹیکنالوجی کی دنیا میں مائیکرو سافٹ جیسے ادارے کی وجہ سے معروف تھا ہی، لیکن اپنی اہلیہ میلنڈا گیٹس کے ساتھ مل کر وہ خدمتِ خلق کے لیے مشہور تھے۔ ان کے نام پر موجود فاؤنڈیشن دنیا بھر میں انسان دوستی کا فریضہ انجام دیتی نظر آ رہی تھی کہ اچانک ان دونوں کی 27 سالہ شادی کے خاتمے کی خبر آ گئی۔

‏65 سالہ بل گیٹس اس وقت دنیا کے چوتھے امیر ترین فرد ہیں، جن کی دولت اس وقت 130.5 ارب ڈالرز ہے۔

بل گیٹس نے ہارورڈ یونیورسٹی چھوڑنے کے بعد 1975ء میں اپنے ساتھی پال ایلن کے ساتھ مل کر مائیکرو سافٹ کی بنیاد رکھی تھی۔ 1986ء میں جب ادارے کے حصص پیش کیے گئے تو تب بل کے پاس 49 فیصد حصص تھے۔ یوں وہ یکدم کروڑ پتی بن گئے۔

بعد ازاں مائیکرو سافٹ کی زبردست کامیابیوں کی بدولت وہ جلد ہی دنیا کے امیر ترین شخص بن گئے۔ البتہ اب یہ اعزاز ان کے پاس نہیں ہے، ایک وجہ تو خدمتِ خلق کے لیے دیے گئے عطیات ہیں تو دوسرے اداروں کا کہیں آگے نکل جانا بھی۔ ایمیزن کے بانی جیف بیزوس، ٹیسلا کے چیف ایگزیکٹو ایلون مسک اور لوئی وتوں کے برنارڈ آرنالٹ دولت مند ترین افراد میں ان سے آگے ہیں۔

میلنڈا کی بل گیٹس سے پہلی ملاقات 1987ء میں تب ہوئی تھی جب انہوں نے مائیکرو سافٹ میں ملازمت کی تھی۔ انہوں نے کمپیوٹر سائنس اور اکنامکس میں گریجویشن کے بعد اس ادارے میں شمولیت اختیار کی تھی۔

آج انہیں خدمتِ خلق کی دنیا کی طاقتور ترین خاتون سمجھا جاتا ہے۔

‏2015ء میں انہوں نے ایک انوسٹمنٹ اینڈ انکیوبیشن فرم Pivotal وینچرز بنائی تھی، جس کی توجہ خواتین کی سماجی بہبود پر ہے۔

دونوں میاں بیوی نے 2000ء میں بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاؤنڈیشن بنائی تھی جو آج دنیا کے بڑے خیراتی اداروں میں سے ایک ہے۔ اس ادارے کی توجہ عوامی صحت، متعدی امراض اور موسمیاتی تبدیلی کے علاوہ تعلیم پر بھی ہے۔

اس نے 1.75 ارب ڈالرز کرونا وائرس کی ویکسین کے منصوبوں، تشخیص اور تحقیق کے حوالے سے بھی دیے ہیں۔

‏1994ء سے 2018ء کے دوران بل اور میلنڈا گیٹس نے فاؤنڈیشن کو 36 ارب ڈالرز دیے۔ ‏2019ء کے اختتام تک فاؤنڈیشن کے خالص اثاثے 43.3 ارب ڈالرز تھے۔

رواں سال فاؤنڈیشن نے مختلف منصوبوں پر امریکا اور دنیا بھر میں 5 ارب ڈالرز خرچ کیے ہیں۔

دونوں کا سات بیڈ رومز رکھنے والا مکان لیک واشنگٹن میں واقع ہے، جس کی مالیت 2020ء کے مطابق 130.8 ملین ڈالرز تھی۔ لیک واشنگٹن سیاٹل اور ریڈ منڈ کے قریب واقع ہے کہ جہاں مائیکرو سافٹ ہیڈ کوارٹر واقع ہیں۔

اس کے علاوہ دونوں کی کیلیفورنیا اور فلوریڈا میں بھی جائیداد ہے جبکہ ایک پرائیوٹ جیٹ طیارہ بھی رکھتے ہیں۔

بل اور میلنڈا گیٹس کی طلاق کے بعد مالی معاملات کیسے حل کیے جائیں گے، اس حوالے سے کوئی تفصیل ظاہر نہیں کی گئی البتہ امکان ہے کہ مشترکہ اثاثے تقسیم کیے جائیں گے۔ ریاست واشنگٹن کے قوانین کے مطابق شادی کے عرصے میں جو بھی املاک حاصل کی جاتی ہیں وہ دونوں کی مشترکہ ملکیت کہلائیں گی اور طلاق کی صورت میں انہیں برابر تقسیم کیا جائے گا۔

مزید تحاریر

تین سال بعد ژوب کے لیے پروازوں کا آغاز

تقریباً تین سال بعد پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز نے کراچی اور ژوب کے درمیان پروازوں کا آغاز کر دیا ہے۔ اس سلسلے کی پہلی پرواز...

کرونا وائرس کے بعد سمندری طوفان بھی بھارت پہنچ گیا، 24 ہلاک، 100 لاپتہ

بحیرۂ عرب میں سمندری طوفان سے بھارت کے مغربی ساحل پر کم از کم 24 افراد ہلاک اور 100 لاپتہ ہو چکے ہیں۔ ایک ایسے...

مقبوضہ کشمیر، کرونا ویکسین کے حوالے سے بھی امتیازی سلوک کا شکار

‏82 سالہ امینہ بانو بڈگام کے ایک سرکاری ہسپتال کے ویکسینیشن روم میں موجود ہیں تاکہ کووِڈ-19 کی ویکسین کا پہلا ٹیکا لگوا سکیں...

گوانتانامو کے معمر ترین پاکستانی قیدی کی رہائی کا امکان روشن ہو گیا

پاکستان سے تعلق رکھنے والے 73 سالہ سیف اللہ پراچہ بدنامِ زمانہ گوانتانامو قید خانے کے سب سے عمر رسیدہ قیدی ہیں۔ بالآخر 16...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے