‏”جو نظر آئے اسے گولی مار دو،” برما کے دو فوجیوں نے مسلمانوں کے قتلِ عام کا اعتراف کر لیا

دو فوجی اہلکاروں نے سپاٹ لہجے میں اپنے جرائم کا اعتراف کیا، گفتگو کے دوران ان کے چہرے پر واحد تاثرات ان کی جھپکتی ہوئی آنکھیں تھیں۔ پرائیوٹ میو وِن تُن نے وڈیو اعترا ف میں کہا ہے کہ اگست 2017ء میں کمانڈنگ افسر کی جانب سے ملنے والے احکامات تھے کہ "جو نظر آئے … ‏”جو نظر آئے اسے گولی مار دو،” برما کے دو فوجیوں نے مسلمانوں کے قتلِ عام کا اعتراف کر لیا پڑھنا جاری رکھیں