28.2 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

حکومت کی جانب سے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا طریق کار متعارف کرادیا گیا

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

وزیراعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے کہا ہے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین میں قومی شناختی کارڈ کے ذریعے ووٹرز کی تصدیق کی جائے گی، موبائل چلانے والا شخص باآسانی ای وی ایم کا استعمال کرسکتا ہے۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشینز کے عملی طریقے کے حوالے سے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ حکومت نے ای وی ایم کا تمام تر اختیار الیکشن کمیشن کو دیا ہے۔ ہر الیکشن کے بعد احتجاج اور اعتراضات کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے، حزب اختلاف کو دعوت دیتے ہیں کے آئیں اور ای وی ایم کا جائزہ لیں، اپوزیشن کے جو سوالات ہیں حکومت اس کا جواب دے گی۔ آزاد امیدواروں کے انتخابی نشان بھی ای وی ایم میں شامل ہوں گے۔

بابر اعوان نے کہا کہ ملک کے موجودہ انتخابی نظام کو کینسر لاحق ہے، انتخابی نظام سے خامیاں دور کرنے کے لیے مزید اقدامات اٹھا رہے ہیں۔ ہم ٹیکنالوجی کے ذریعے دھاندلی کو شکست دینے کی تقریب میں شریک ہیں۔ الیکٹرانک ووٹنگ میں نادرا ڈیٹا کے مطابق ووٹر کی تصدیق شناختی کارڈ سے کی جائے گی۔ ہم سے 5 گنا زیادہ آبادی والے ملک میں اب انتخابی نتائج باآسانی قبول کرلیے جاتے ہیں۔

اس موقع پر وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن نے ووٹنگ مشین کے لیے 36 شرائط دیں، ہم نے تمام پوری کردیں۔ دنیا کے 20 ممالک میں اس وقت الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں استعمال ہورہی ہیں۔ ای وی ایم نہ ہی انٹرنیٹ اور بجلی سے منسلک ہوگی بلکہ اس کی اپنی بیٹری ہوگی۔

وزیر اطلاعات نے مزید کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشینز سے الیکٹرانک ریکارڈ کے ساتھ ساتھ پیپر ریکارڈ بھی ہوگا۔ جسے موبائل چلانا آتا ہے وہ آسانی سے ای وی ایم کا استعمال کرسکتا ہے۔ الیکشن اصلاحات کے لیے اتفاق رائے ضروری ہے، الیکشن اصلاحات پر تمام جماعتیں بیٹھیں اور متفقہ فیصلہ کریں۔

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے