19.9 C
Islamabad
ہفتہ, دسمبر 4, 2021

ہمیں دو تہائی اکثریت دے دیں پھر ہم سے ٹرین حادثے کا پوچھا جائے، فیصل واوڈا

تازہ ترین

ورلڈکپ کون جیتے گا؟ – احمدحماد

کرکٹ کانواں ورلڈ کپ ٹورنامنٹ ۲۰۰۷ء کے موسم بہار میں ویسٹ انڈیز میں کھیلا گیا۔ یہ ورلڈ کپ ون ڈے انٹرنیشنل میچوں پہ مشتمل...

بُزدار کا لاہور – احمدحماد

لاہورہزاروں سال پرانا شہر ہے۔یہاں کے باسی اس سے بہت پیار کرتے ہیں۔جس طرح عربی زبان بولنے والے دیگر زبانیں بولنے والوں کو گونگا...

مزاحمت لیکس – احمدحماد

بارہ اکتوبر ۱۹۹۹؁ء کے فوجی انقلاب کی دو کہانیاں ہیں۔ اور دونوں ہی عوام نے سن رکھی ہیں۔ ایک کہانی وہ ہے جو ہم...

شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ نہیں بنایا گیا، شہزاد اکبر

مشیر داخلہ واحتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن غلط بیانی کررہی ہے۔ شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ بنایا گیا...
- Advertisement -

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما سینیٹر فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ جس ٹریک پر حادثہ ہوا وہ ریلوے ٹریک ہماری حکومت میں نہیں لگے۔ ہمیں دو تہائی اکثریت دے دیں پھر ہم سے پوچھا جائے۔

نجی ٹی وی چینل اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ ایک افسوس ناک عمل ہے، ہمارا فرسودہ نظام اور سسٹم جو ریلوے کا ہے جس میں 30 سے 40 سال سے مافیا بیٹھی ہے اس کا یہ نتیجہ ہے، چاہے وہ کسی کی بھی حکومت ہو۔ فیصل واوڈا نے حادثے کی ذمہ داری گزشتہ حکومت پر ڈالتے ہوئے کہا کہ ماضی کی حکومتوں میں اگر کوئی ڈیم بنایا جاتا ہے، اگر وہ کریک ہوجائے تو کیا ذمہ داری میرے اوپر آئے گی؟ میں نے تو جب سے وزارت سنبھالی ہے میں صرف اس عرصے کا جواب دوں گا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا وزیراعظم عمران خان جب اپوزیشن میں وزیر ریلوے کے استعفوں کی باتیں کرتے تھے تو وہ ان وزیروں کی بات کرتے تھے جنہوں نے اپنے دور میں خستہ حال ٹرینوں کو خریدا جنہیں کوئی خریدنے کو تیار نہیں تھا۔ وہی ٹرینیں آج ہم چلانے پر مجبور ہیں اور جس کی وجہ سے حادثات ہورہے ہیں۔ اگر اعظم سواتی یا وزیراعظم عمران خان کے ہوتے ہوئے ٹرین کی تھرڈ کلاس بوگیوں کو خریدا جاتا ہے اور پھر حادثہ پیش آئے تو 100 فیصد انہیں مستعفی ہوجانا چاہیئے۔

میزبان کی طرف سے سوال کیا گیا کہ آپ رپورٹ بنا کر عوام کے سامنے کیوں نہیں لاتے؟ جس پر پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ اس سے مزید ملک کا تماشہ بنے گا۔ بجلی حکومت نے مہنگی کی، انٹرنیشنل گارنٹیز وغیرہ وغیرہ لیکن یہ نہیں بتایا گیا کہ رپورٹ کیوں نہیں بنا کر پبلک کرتے سوائے رولا ڈالنے کے انہیں اور کوئی کام نہیں۔

اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما محمد زبیر نے کہا کہ جب حکومت خود کہہ رہی ہے کہ اس کی ذمہ داری نہیں ہے تو پھر آپ کیوں ملک کو تباہ کرنے کے لیے بیٹھے ہیں؟ لیگی دور میں کوئی فردوس عاشق اعوان کی طرح یہ نہیں کہتا تھا کہ ہمارے دور میں ٹرین کا یہ پہلا واقعہ ہے۔ 2015 میں اگر کوئی ٹرین حادثہ ہوا ہم نے کبھی یہ نہیں کہا کہ جب تک ہم ٹرین کی بوگیاں نہیں خریدیں گے تب تک ہم پر ذمہ داری عائد نہیں ہوسکتی۔

مزید تحاریر

ورلڈکپ کون جیتے گا؟ – احمدحماد

کرکٹ کانواں ورلڈ کپ ٹورنامنٹ ۲۰۰۷ء کے موسم بہار میں ویسٹ انڈیز میں کھیلا گیا۔ یہ ورلڈ کپ ون ڈے انٹرنیشنل میچوں پہ مشتمل...

بُزدار کا لاہور – احمدحماد

لاہورہزاروں سال پرانا شہر ہے۔یہاں کے باسی اس سے بہت پیار کرتے ہیں۔جس طرح عربی زبان بولنے والے دیگر زبانیں بولنے والوں کو گونگا...

مزاحمت لیکس – احمدحماد

بارہ اکتوبر ۱۹۹۹؁ء کے فوجی انقلاب کی دو کہانیاں ہیں۔ اور دونوں ہی عوام نے سن رکھی ہیں۔ ایک کہانی وہ ہے جو ہم...

شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ نہیں بنایا گیا، شہزاد اکبر

مشیر داخلہ واحتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن غلط بیانی کررہی ہے۔ شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ بنایا گیا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے