36 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

ہمارا مقابلہ پیپلز پارٹی سے نہیں، نہ ہی وہ پی ڈی ایم کا حصہ ہے، مریم نواز

تازہ ترین

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...
- Advertisement -

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کا وہی مؤقف ہے جو نواز شریف کا ہے، میرا نہیں خیال کہ پیپلز پارٹی کے معاملے پر بات کرنے کی اب ضرورت ہے، استعفوں کا فائدہ تب ہوتا جب پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتیں متفق ہوتیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عالمی میڈیا کے ذریعے خبریں پہنچ رہی ہیں کہ موجودہ حکومت امریکہ کو فضائی اڈے دے چکی ہے۔ امریکہ کو پاکستانی اڈے خفیہ مذاکرات سے نہیں مل سکتے، اب تک تردید بھی نہیں آئی۔ پاکستان میں امریکہ کو اڈے دینے کی مخالفت کرتے ہیں۔

مریم نواز نے کہا کہ چیئرمین نیب تو وزیراعظم عمران خان ہی ہیں، ایک کو ہٹادیں تو دوسرے کو لگادیں۔ چیئرمین نیب کی طرح وزیراعظم عمران خان کے آلہ کار بننے والوں کو بھی بھگتنا پڑے گا، ان کا بھی احتساب ہوگا۔ شوکت عزیز صدیقی کی گواہی بڑی ہے، اس کی آزادانہ تحقیقات کرائی جائیں، یہ صرف شوکت عزیز کا کیس نہیں بلکہ بہت الارمنگ بات ہے جو عدلیہ کو سمجھنا چاہیئے۔

لیگی نائب صدر کا کہنا تھا کہ آج کیس سننے والے جج بھی کٹہرے میں ہوں گے، اسی طرح جو آج کیس سن رہے ہیں کل انہیں بھی کٹہرے میں کھڑا ہونا پڑے گا۔ عدلیہ کو اس پر کام کرنا چاہیئے کہ کوئی بھی کسی جج کے ذریعے غلط فیصلہ نہ کر سکے۔ موجودہ حکومت میں اداروں کو صرف سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کے لیے استعمال کیا جارہا ہے۔ اداروں کے استعمال کے حوالے سے بشیر میمن کا بیان موجود ہے۔

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے مستقبل کے لائحہ عمل کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی اب پی ڈی ایم کا حصہ نہیں رہی۔ میرا نہیں خیال کہ پیپلز پارٹی کے معاملے پر بات کرنے کی اب ضرورت ہے۔ پیپلز پارٹی نہ میرا ہدف ہے اور نہ ہی ہمارا مقابلہ پیپلز پارٹی سے ہے۔ پی ڈی ایم میں کوئی اختلاف موجود نہیں ہے، تمام اتحادی جماعتوں کا ایک ہی نظریہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ دور حکومت میں مسلم لیگ ن نے لوڈشیڈنگ ختم کردی تھی جس کا مطلب اس حکومت کو صفر لوڈشیڈنگ ملی تھی لیکن نالائقی کی حد دیکھیے کہ 50 ڈگری درجہ حرارت میں 22،22 گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ حال ہی میں ہونے والا ڈہرکی ٹرین حادثہ بھی حکومتی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

واضح رہے کہ نواز شریف، مریم نواز اور صفدر اعوان کے خلاف نیب ریفرنسز میں سزا کے خلاف اپیلوں کی آج سماعت ہورہی ہے جس کے لیے مسلم لیگ ن کی نائب صدر اسلام آباد ہائیکورٹ پہنچی ہیں۔ گزشتہ سماعت کے دوران عدالت نے مریم نواز کے وکیل کی جانب سے سماعت ملتوی کرنے کی درخواست منظور کرتے ہوئے کیس کی سماعت آج 9 جون تک ملتوی کی تھی۔

مزید تحاریر

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے