35.3 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

ویکسین نہ لگوانے والے مزید پابندیوں کا شکار ہوں گے

تازہ ترین

”ہم کیا ہماری ہجرت کیا“ – سلمان احمد صوفی

وہ لوگ بہت خوش قسمت تھے جو عشق کو کام سمجھتے تھے یا کام سے عاشقی کرتے ہم جیتے جی مصروف رہے کچھ عشق کیا ، کچھ کام...

بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی، اعتزاز احسن

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیئر قانون دان چودھری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ 1985 کی اسمبلی اس ملک کی بربادی کی...

3 مرتبہ وزیراعظم بننے والے نواز شریف کاش ایسا ہسپتال بنالیتے جس پر انہیں یقین ہوتا، اسد عمر

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ شہباز شریف ضمانتی تھے تو کاش وہ نواز شریف کو بھی پاکستان واپس...

دنیا کا تیسرا سب سے بڑا ہیرا دریافت

افریقہ کے ملک بوٹسوانا میں ایک کمپنی نے 1,098 قیراط کا ہیرا دریافت کیا ہے، جسے اپنی نوعیت کا دنیا کا تیسرا سب سے...
- Advertisement -

پنجاب حکومت کی جانب سے کورونا ویکسین لگانے کے حوالے سے مزید سختی کردی گئی ہے، وقت پر ویکسینیشن نہ کروانے والوں کے لیے موبائل سم کارڈ کی بندش سمیت مختلف سزائیں دینے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں کورونا وائرس کی ویکسین لگوانے والوں کی تعداد میں اضافے سے متعلق تجاویز پیش کی گئیں۔ دوران اجلاس ویکسین نہ لگوانے والے شہریوں کا موبائل سم کارڈ بلاک کرنے کی تجویز بھی دی گئی۔ ساتھ ہی ویکسین لگائے بغیر ریسٹورنٹس، پارکس، شاپنگ مالز اور سرکاری دفاتر میں بھی داخلے پر پابندی پر غور کیا گیا ہے۔

اس موقع پر صوبائی وزیر نے کہا کہ عالمی وبا کورونا وائرس سے چھٹکارے کا واحد حل ویکسینیشن ہی ہے۔ آبادی کے لحاظ سے ہر ضلع کے لیے روزانہ ویکسینیشن کا ہدف مقرر کردیا گیا ہے، اہداف پورا نہ کرنے والے اضلاع کے افسران سے تفتیش ہوگی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز محکمہ صحت خیبر پختونخوا کی جانب سے بھی تمام سرکاری ملازمین پر ویکسین لگوانے سے متعلق کڑی شرط رکھی گئی تھی جس کے مطابق سرکاری دفاتر میں ویکسین کے بغیر داخلہ ممنوع قرار دیا گیا تھا۔

صوبائی محکمہ صحت کے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق سرکاری ملازمین کو کورونا وائرس کی ویکسین لگوانے کے لیے سرکاری محکموں کو مرحلہ وار ڈیڈلائن دی گئی ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ محکمہ صحت کی طرف سے تمام اداروں کے انتظامی سربراہان کو اپنے اسٹاف کی ویکسینیشن کرانے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ خیبر پختونخوا کے 21 محکموں کو 30 جون اور 11 محکموں 15 جولائی کی ڈیڈلائن دی گئی ہے۔ ڈیڈلائن کے بعد ویکسین نہ لگوانے والے ملازمین کو دفتر میں داخل ہونے سے روک دیا جائے گا۔

مزید تحاریر

”ہم کیا ہماری ہجرت کیا“ – سلمان احمد صوفی

وہ لوگ بہت خوش قسمت تھے جو عشق کو کام سمجھتے تھے یا کام سے عاشقی کرتے ہم جیتے جی مصروف رہے کچھ عشق کیا ، کچھ کام...

بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی، اعتزاز احسن

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیئر قانون دان چودھری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ 1985 کی اسمبلی اس ملک کی بربادی کی...

3 مرتبہ وزیراعظم بننے والے نواز شریف کاش ایسا ہسپتال بنالیتے جس پر انہیں یقین ہوتا، اسد عمر

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ شہباز شریف ضمانتی تھے تو کاش وہ نواز شریف کو بھی پاکستان واپس...

دنیا کا تیسرا سب سے بڑا ہیرا دریافت

افریقہ کے ملک بوٹسوانا میں ایک کمپنی نے 1,098 قیراط کا ہیرا دریافت کیا ہے، جسے اپنی نوعیت کا دنیا کا تیسرا سب سے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے