35.3 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

مالی سال 22-2021 کے بجٹ میں غریب ہمارے لیے نمبر ون ترجیح ہوگا، وزیر خزانہ

تازہ ترین

”ہم کیا ہماری ہجرت کیا“ – سلمان احمد صوفی

وہ لوگ بہت خوش قسمت تھے جو عشق کو کام سمجھتے تھے یا کام سے عاشقی کرتے ہم جیتے جی مصروف رہے کچھ عشق کیا ، کچھ کام...

بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی، اعتزاز احسن

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیئر قانون دان چودھری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ 1985 کی اسمبلی اس ملک کی بربادی کی...

3 مرتبہ وزیراعظم بننے والے نواز شریف کاش ایسا ہسپتال بنالیتے جس پر انہیں یقین ہوتا، اسد عمر

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ شہباز شریف ضمانتی تھے تو کاش وہ نواز شریف کو بھی پاکستان واپس...

دنیا کا تیسرا سب سے بڑا ہیرا دریافت

افریقہ کے ملک بوٹسوانا میں ایک کمپنی نے 1,098 قیراط کا ہیرا دریافت کیا ہے، جسے اپنی نوعیت کا دنیا کا تیسرا سب سے...
- Advertisement -

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ غریب آدمی کے لیے مالی بجٹ 22-2021 میں توجہ دی گئی ہے، ہم نے غریب کی زندگی آسان کرنی ہے، ان کے خواب کو پورا کرنا ہے اور اس بجٹ میں غریب ہمارے لیے نمبر ون ترجیح ہوگا۔

اقتصادی سروے پیش کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ مہنگائی روکنے کے لیے پیداوار اور بڑھائیں۔ ہم زراعت میں پیداوار کو بڑھائیں گے، زراعت پر زور دینا ہوگا اور ہماری کوشش ہوگی کہ برآمدات میں بھی اضافہ ہو۔ ساتھ ہی اب ہمیں اپنے انفراسٹرکچر کو بھی بہتر کرنا ہوگا۔ ایف بی آر کی ٹیکس وصولیاں گزشتہ سال کے مقابلے میں 11 فیصد سے زیادہ ہیں۔

شوکت ترین نے بتایا کہ پیش گوئی نہیں کرسکتا کہ پاکستان گرے لسٹ سے وائٹ لسٹ میں آئے گا۔ 3 سے 4 ماہ سے گروتھ 50 فیصد سے زائد ہے، صنعتوں میں 26 فیصد گروتھ آئی ہے۔ رواں سال فروری میں کورونا وائرس کا بھی سامنا رہا لیکن اب اللہ کا شکر ہے کہ کورونا وائرس کو کنٹرول کیا جاچکا ہے۔ کورونا وبا کے باعث معیشت کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا لیکن اب ریکوری شروع ہوگئی ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ آئی ٹی 50 فیصد گروتھ کررہی ہے، اس کو 100 فیصد پر لے کر جانے کا ہدف ہے۔ بھارت نے 10 سال میں آئی ٹی کو 100 گنا بڑھایا، کیا ہم آئی ٹی کو 50 فیصد مزید نہیں بڑھا سکتے؟ روایتی برآمدات کے علاوہ بھی دیگر مصنوعات کی برآمدات بڑھائیں گے، ہمیں برآمدات اور براہ راست سرمایہ کاری بڑھانی ہے۔

وزیر خزانہ نے مزید کہا کہ ترسیلات زر یہ ثابت کرتی ہیں کہ بیرون ملک پاکستانیوں کا وزیراعظم عمران خان سے گہرا تعلق ہے۔ ترسیلات زر 29 فیصد سے گروتھ کررہی ہیں، ترسیلات زر ہمارے لیے الل نے فرشتہ بنا کر بھیج دیا اور ہمارا کرنٹ اکاؤنٹ بھی سرپلس چل رہا ہے۔

واضح رہے کہ وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کی جانب سے 11 جون کو مالی سال 22-2021 کا بجٹ پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا۔ آئندہ مالی سال کے بجٹ کا کل حجم 8000 ارب روپے کے لگ بھگ ہوگا جبکہ معیشت کا حجم 52 ہزار 57 ارب تک پہنچے گا۔

مزید تحاریر

”ہم کیا ہماری ہجرت کیا“ – سلمان احمد صوفی

وہ لوگ بہت خوش قسمت تھے جو عشق کو کام سمجھتے تھے یا کام سے عاشقی کرتے ہم جیتے جی مصروف رہے کچھ عشق کیا ، کچھ کام...

بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی، اعتزاز احسن

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیئر قانون دان چودھری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ 1985 کی اسمبلی اس ملک کی بربادی کی...

3 مرتبہ وزیراعظم بننے والے نواز شریف کاش ایسا ہسپتال بنالیتے جس پر انہیں یقین ہوتا، اسد عمر

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ شہباز شریف ضمانتی تھے تو کاش وہ نواز شریف کو بھی پاکستان واپس...

دنیا کا تیسرا سب سے بڑا ہیرا دریافت

افریقہ کے ملک بوٹسوانا میں ایک کمپنی نے 1,098 قیراط کا ہیرا دریافت کیا ہے، جسے اپنی نوعیت کا دنیا کا تیسرا سب سے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے