36 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

کرونا وائرس: بھارت میں ایک دن میں 6,000 اموات، نیا عالمی ریکارڈ

تازہ ترین

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...
- Advertisement -

بھارت میں کرونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد اب ساڑھے 3 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے، ایک دن میں 6,000 مزید اموات کے ساتھ ایک نیا ریکارڈ بھی قائم ہو گیا۔ اس سے پہلے دنیا کے کسی ملک میں ایک دن میں اتنی زیادہ اموات نہیں ہوئیں۔

بھارت کی وزارتِ صحت نے جمعرات کو جو اعداد و شمار ظاہر کیے ہیں، ان کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کووِڈ سے 6,148 اموات ہوئیں، جبکہ نئے مریضوں کی تعداد مسلسل تیسرے روز ایک لاکھ سے کم رہی۔

اموات کی سب سے زیادہ شرح بھارت کی غریب ترین ریاستوں میں شمار ہونے والی ریاست بہار میں رہی، جس نے گزشتہ روز ہی ریاست میں ہونے والی کُل اموات کی تعداد پر نظر ثانی کی ہے اور انہیں 5,400 کے بجائے 9,400 قرار دیا ہے۔ اس کی وجہ گھروں اور ہسپتالوں میں مرنے والے افراد کی تعداد بھی شامل ہونا ہے۔

بھارت فروری سے کرونا وائرس کی دوسری لہر کے ہاتھوں بے حال ہے۔ اپریل اور مئی کے اوائل میں تو کووِڈ نے ملک کے نظامِ صحت کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ بستروں، آکسیجن اور ادویات کی شدید کمی نے بحران کو مزید گمبھیر کر دیا اور کئي ڈاکٹر اور صحت کے شعبے سے وابستہ کارکنان اس مرض کا نشانہ بنے۔

مئی کے اوائل میں روزانہ سامنے آنے والے مریضوں کی تعداد عروج پر پہنچی، جس کے بعد ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا کہ رواں سال ایک تیسری لہر بھی آئے گی۔ ان کا کہنا ہے کہ اب بچنے کا واحد راستہ ویکسین لگانے کا عمل تیز کیا جائے تاکہ ملکی معیشت بھی بحران سے نکلے اور ممکنہ تیسری لہر کے اثرات کو بھی کم کیا جا سکے۔

لیکن جنوری سے شروع کی گئی ویکسین لگانے کی مہم اب تک کئی مسائل سے دوچار ہے، جن کی وجہ سے اب تک 5 فیصد آبادی کو بھی مکمل ویکسین نہیں لگ پائی۔

حکومت کا کہنا ہے کہ دسمبر تک ویکسین کے 2 ارب سے زیادہ ٹیکے دستیاب ہوں گے اور رواں ہفتے اس نے تمام بالغان کے لیے ویکسین لگانے کا اعلان بھی کیا ہے۔

بھارت میں کرونا وائرس سے 2.9 کروڑ افراد متاثر ہو چکے ہیں جبکہ 3,53,000 اموات کا اعلان کیا گیا ہے۔ لیکن ماہرین ان سرکاری اعداد و شمار کو تسلیم نہیں کرتے اور ان کا کہنا ہے کہ اصل تعداد اس سے تین سے پانچ گُنا زیادہ ہے۔

مزید تحاریر

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے