36 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

جب باہر نکلا تو فردوس عاشق اعوان نے کالر سے پکڑلیا، بھاگ کر جان بچائی، قادر مندوخیل

تازہ ترین

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...
- Advertisement -

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی قادر خان مندوخیل نے کہا ہے کہ فردوس عاشق اعوان کے گالی دینے پر میں چپ رہا اور اپنے غصے کو کنٹرول کیا، ان کے خلاف مقدمہ درج کروا کر کرمنل کیس کریں گے، مجھ پر حملہ کیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل سماء نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے گزشتہ روز منظر عام پر آنے والی ویڈیو سے متعلق وضاحت کی۔ انہوں نے کہا کہ تمام وکلاء اور مزدور تنظیموں نے بھی کل کے واقعے کے مذمت کی ہے۔ اپنی روایات اور اخلاقیات کی وجہ سے میں خاموش رہا اور خاتون ہونے کے ناطے فردوس عاشق اعوان کو جواب نہیں دیا۔ میں سپریم کورٹ کا وکیل اور انسانی حقوق کا علمبردار ہوں، کسی کو گالی نہیں دے سکتا۔

قادر خان مندوخیل نے واقعے کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ ٹاک شو کے دوران فردوس عاشق اعوان نے مجھے گالیاں دیں جس پر پروگرام کے میزبان کو وقفہ لینا پڑا۔ اس کے باوجود ان کی طرف سے گالیاں دینے کا سلسلہ نہیں رکا۔ بعد ازاں جب پروگرام کے اختتام کے بعد میں باہر نکل گیا تو معاون خصوصی نے مجھے پیچھے کالر سے پکڑلیا جس کے بعد مجھے جلدی سے دروازہ کھول کر گاڑی کی طرف جاکر جان بچانی پڑی۔

پیپلز پارٹی رہنما کا کہنا تھا کہ پروگرام میں ہونے والے واقعے کے گواہ چینل کے ملازمین ہیں۔ میں اونچی آواز میں ضرور بولتا ہوں لیکن کوئی بدتمیزی نہیں کی۔ کرپشن پر اظہار خیال کرنا کہاں کی بدتمیزی ہے؟ اگر فردوس عاشق اعوان  اپنی حرکت پر شرمندہ ہیں تو میں انہیں معاف کرنے کے لیے تیار ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ فردوس عاشق اعوان نے مجھے قانونی نوٹس بھیجا ہے، اب جو بات ہوگی وہ عدالت میں کریں گے۔ گالیاں مجھے دی گئیں، تھپڑ مجھے مارے گئے، ان کے پاس میرے خلاف کیا ثبوت ہیں؟ مجھے پتا چلا ہے کہ ان کی جماعت کے اندر بھی انہیں اس حرکت پر خبردار کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز نجی ٹی وی چینل ایکسپریس نیوز کے پروگرام کل تک میں ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، قادر مندوخیل کو اسٹوڈیو میں دعوت دی گئی تھی جبکہ ن لیگ کی عظمیٰ بخاری کال پر موجود تھیں۔ دوران پروگرام قادر خان مندوخیل کی طرف سے اظہار خیال کیے جانے پر فردوس عاشق اعوان کھڑی ہوگئیں اور ساتھ بیٹھے پیپلز پارٹی رہنما کا گریبان پکڑ لیا اور انہیں تھپڑ رسید کردیا۔

مزید تحاریر

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے