36 C
Islamabad
جمعہ, جون 18, 2021

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم پر بننے والی فلم پر تنقید کیوں؟

تازہ ترین

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...
- Advertisement -

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈیرن دنیا کی مشہور ترین رہنماؤں میں سے ایک ہیں اور انہیں خوب سراہا بھی جاتا ہے۔ تو ان کی زندگی پر بننے والی فلم کا بھی شدت سے انتظار ہونا چاہیے؟ لیکن آئندہ فلم پر ابھی سے کڑی تنقید کی جا رہی ہے۔

پتہ چلا ہے کہ "They Are Us ” نامی فلم کی کہانی کرائسٹ چرچ دہشت گردی اور اس پر وزیر اعظم کے رد عمل کے گرد گھومتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ ملک میں اور ملک سے باہر اسے سخت ترین تنقید کا سامنا ہے۔

یہ فلم نیوزی لینڈ کے معروف فلم ساز اینڈریو نکول تحریر کر رہے ہیں اور ہدایات بھی انہی کی ہوں گی جبکہ فلم میں آرڈیرن کا کردار مشہور اداکارہ روز بائرن نبھائیں گی۔ فلم کی کہانی مارچ 2019ء کے واقعات کے گرد گھومتی ہے کہ جب نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی دو مساجد پر دہشت گرد حملے ہوئے تھے جن میں ایک سفید فام نسل پرست کے ہاتھوں 51 مسلمان شہید ہوئے تھے۔ فلم کا نام "They Are Us ” جیسنڈا آرڈیرن کی ایک تقریر کے الفاظ سے لیا گیا ہے۔

لیکن اس خبر کے نیوزی لینڈ پہنچے ہی مقامی ذرائع ابلاغ میں اسے سخت نکتہ چینی کا سامنا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ فلم میں مسلمانوں کے بجائے آرڈیرن کو مرکزی کردار دکھانا مایوس کن ہے جبکہ اس واقعے کی یادیں اب بھی کئی ذہنوں میں تازہ ہیں۔ نیوزی لینڈ میں سوشل میڈیا پر ‎ #TheyAreUsShutdownکا ٹرینڈ چلتا رہا کہ جس میں ان لوگوں نے بھی ردِ دکھایا ہے جو ان واقعات میں بچ گئے تھے جبکہ عام مسلمانوں، مصنفین اور انسانی حقوق کے کارکنوں نے بھی سخت رد عمل دیا ہے۔

کرائسٹ چرچ کی مسلم برادری نے تو اس فلم کے حوالے سے اپنی "لا علمی” کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ اس بارے میں ان سے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا۔

کرائسٹ چرچ دہشت گردی میں شہید ہونے والے حسین کی بہن آیہ عمری کہتی ہیں کہ انہیں تو فلم کے بارے میں سوشل میڈیا سے پتہ چلا ہے۔ ابھی کیونکہ ہمیں اس کا پسِ منظر معلوم نہیں اس لیے کچھ کہا نہیں جا سکتا۔ لیکن ایسا لگتا ہے کہ کوئی اس صورتِ حال سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہا ہے جسے نیوزی لینڈ اچھا نہیں سمجھیں گے۔

کرائسٹ چرچ مسلم ایسوسی ایشن کے ترجمان عبد غنی علی نے کہا کہ ہم نے حملے کے بعد وزیر اعظم کے اقدامات کو بخوبی سراہا، لیکن فلم کے بارے میں ہمیں شکوک و شبہات ہیں۔

ٹوئٹر پر نیوزی لینڈ کے ایوارڈ یافتہ صحافی محمد حسن نے کہا ہے کہ فلم ساز کو ایک مرتبہ پھر روایتی "سفید فام نجات دہندہ” کا تصور پیش کرنے کی ضرورت نہیں۔ اخبار "نیوزی لینڈ ہیرلڈ” کے لیے لکھتے ہوئے حسن کہتے ہیں کہ "افسوس ناک بات یہ ہے کہ فلم کی مرکزی داستان سانحے اور اس کا نشانہ بننے والے افراد نہیں، بلکہ وزیر اعظم کے ردِ عمل پر ہے۔ اسے ایک اچھی داستان کی حیثیت سے پیش کیا جا رہا ہے جس میں دہشت گردی کے مقابلے پر دلیری دکھائی گئی۔ یہ کہانی ہے سفید فام بالا دستی کی کہ جس کے گرد انہی کی آوازیں ہیں، انہی کے احساسات اور انہی کی بہادری و دلیری کی کہانیاں۔ کیا ستم ظریفی ہے۔”

لیکن ہدایت کار نکول کہتے ہیں کہ یہ فلم حملے کے بارے میں ہے ہی نہیں، بلکہ اس کا موضوع حکومت کا ردِ عمل ہے۔ نکول ایک معروف مصنف ہیں اور ماضی میں "The Terminal” اور "The Truman Show” جیسی شہرۂ آفاق فلمیں بھی لکھ چکے ہیں۔

ویسے وزیر اعظم آرڈیرن پہلے ہی اس منصوبے سے لا تعلقی کا اظہار کر چکی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کا اور حکومت اس منصوبے سے کوئی تعلق نہیں۔

مزید تحاریر

پی ٹی آئی دور میں گھوڑوں کے بجائے گدھوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ خبردار! اگر کسی نے نالائق حکومت کے لیے ریاست مدینہ کا لفظ...

اسلام آباد میں خواتین کے لیے الگ بازار بنانے جا رہے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ منشیات اور آئس کے ڈیلرز کو فور طور پر ختم کیا جائے، اسلام آباد...

پیٹرول کے بعد سی این جی کی قیمتوں میں بھی فی کلو 9 روپے اضافے کا امکان

آئندہ ماہ کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کی قیمتوں میں 9 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان، سی این جی کی موجودہ...

پی ٹی آئی حکومت کی کامیابی کا پیمانہ کیا ہو؟ – جمال عبداللہ عثمان

پیمانہ کیا ہو کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق تمام حکومتوں سے بہت اچھا پرفارم کیا ہے۔ یا پھر پیمانہ کیا ہو، جس سے پتا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے