28.2 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

پاکستان کی بہتری کے لیے کسی کے گھٹنے کو ہاتھ لگانا پڑا تو تیار ہوں، شہباز شریف

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ 2014 میں اگر چینی صدر پاکستان آجاتے تو پاکستان کی غریب عوام کے لیے خوشحالی ہی خوشحالی ہوتی، پاکستان کے لیے مجھے کسی کے پاس بھی جانا پڑا جاؤں گا اس کے گھٹنے کو ہاتھ لگاؤں گا کہ آؤ پاکستان کے لیے کام کریں۔

قومی اسمبلی کے معاملات بہتر ہونے کے بعد بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں عوام نے منتخب کرکے بھیجا ہے لیکن ہماری بدقسمتی یہ ہے کہ گزشتہ 5 دن سے چو کچھ ہورہا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔ قومی اسمبلی کے ایک اجلاس کے لیے کروڑوں روپے خرچ ہوتے ہیں، حالیہ دنوں میں جو جو قانون سازی کی گئی وہ آئین کے خلاف ہے۔ موجودہ بجٹ عوام دوست نہیں بلکہ عوام دشمن ہے اور عوام کی جیب خالی ہے تو بجٹ جعلی ہے۔ حزب اختلاف کا فیصلہ تھا کہ دونوں طرف کی تقاریر کو سنیں گے لیکن بدقسمتی سے اپوزیشن کو دیوار سے لگانے کی کوشش کی گئی۔

شہباز شریف نے کہا کہ آج صوبوں اور وفاق میں اتفاق ہی نہیں ہے بلکہ 3 سالوں میں تلخیاں اور بڑھ گئی ہیں۔ 3 سال ہوگئے اب تک سابق وزیراعظم نواز شریف کے منصوبوں پر تختیاں لگائی جارہی ہیں۔ ن لیگ نے حکومت چھوڑی تو جی ڈی پی 5.8 فیصد تھی لیکن آج 3 سال میں 2 کروڑ لوگ غربت کی لکیر سے نیچے آگئے۔ ریاست مدینہ میں کوئی رات کو بھوکا نہیں سوتا تھا لیکن یہاں تو مہنگائی کی شرح آسمان کو چھو رہی ہے۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان ایوان میں موجود نہیں لیکن مجھے امید ہے کہ وزیراعظم تک میری باتیں پہنچ جائیں گی۔ ملک میں 3 سالوں میں جو کچھ ہوا وہ سب کے سامنے ہے۔ کہاں ہیں 50 لاکھ نوکریاں اور کہاں ہیں 50 لاکھ گھر؟ افغانستان کی بات ہو، کشمیر ہو یہ سیٹ خالی رہتی ہے، مہنگائی کی بات ہو یا بے روزگاری کی یا کورونا کی بات ہو یہ سیٹ خالی رہتی ہے۔ اس طرح ملک نہیں چلتے۔ ان کا کام ہے کہ آکر ایوان کو اعتماد میں لیں۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ بجٹ سے متعلق لوگ سوال پوچھ رہے ہیں کہ اس بجٹ میں ایک کروڑ نوکریاں کہاں ہیں۔ بجٹ میں ٹیکس لگا کر آپ صرف خدا کی ناراضگی حاصل کریں گے۔ غریب آدمی پہلے ہی روٹی اور دہی سے گزارا کر رہا ہے، اب آپ اس سے اس کا دہی بھی چھین رہے ہیں۔ کسان کی توانائی چینی ہوتی ہے جو چائے یا لسی میں ڈال کر وہ پیتا ہے، آپ اس سے چینی چھین رہے ہیں۔

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے