25.7 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی، اعتزاز احسن

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیئر قانون دان چودھری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ 1985 کی اسمبلی اس ملک کی بربادی کی وجہ بنی ہے، اسمبلی کی ساری روایات اسی دور میں خراب کی گئیں۔

نجی ٹی وی چینل آج نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں کبھی بھی دھرنے کی سیاست کے حق میں نہیں رہا اور کسی سے بھی بندوق رکھ کر استعفیٰ نہیں لیا جا سکتا۔ کنپٹی پر بندوق رکھ کر آپ کسی وزیراعظم سے استعفیٰ نہیں مانگ سکتے۔ جس طرح سابق وزیراعظم نواز شریف نے دھرنوں سے استعفیٰ نہیں دیا تھا، ویسے ہی وزیراعظم عمران خان کو دھرنوں سے نہیں نکالا جاسکتا۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ اگر موجودہ بجٹ پاس نہیں ہوا تو وزیراعظم عمران خان کی حکومت زمین بوس ہوجائے گی۔ اگر بجٹ پاس نہ ہوا تو ریاست کسی کی تنخواہ نہیں بڑھا سکے گی، کوئی ترقیاتی کام نہیں کرسکے گی۔ اسی طرح بجٹ پاس نہ ہونے کی صورت میں پرانے ٹیکسز لگے رہیں گے اور نئے ٹیکسز رہ جائیں گے۔

اسپیکر اسمبلی یا وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے ووٹ کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ آرٹیکل 263 کے تحت صرف انتخابات خفیہ ہوتے ہیں لیکن یہ انتخابات نہیں ہیں۔ یہ ایک تحریک ہے جس میں اوپن ووٹ ہوں گے، اب اسپیکر کی مرضی ہے کہ وہ ڈویژن کے ذریعے کروائیں یا کسی اور طرح۔

قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی سے متعلق انہوں نے کہا کہ ماضی میں ملک کی سیاست اچھی بھی تھی بری بھی تھی، اس میں ظرف بھی تھا، سختی بھی تھی، کبھی کبھی شاعری آجاتی تھی لیکن پارلیمانی زبان تھی۔ پھر 1985 میں ایک جرنیل نے ایسا فیصلہ کیا جس کے مطابق ایک ایسی اسمبلی لائی گئی جس میں ہر ممبر آزاد رکھا گیا اور انہیں بتادیا گیا کہ یہ تمھارا وزیراعظم ہے، یہ وزیر خزانہ، یہ وزیر دفاع، اب وزارت وزارت کھیلو، حکومت میں نے اور میرے ساتھیوں نے چلانی ہیں۔

پیپلز پارٹی رہنما نے کہا کہ آصف زرداری نے پہلے دن ہی بتادیا تھا کہ 4 سال آپ کو حکومت کرنے دیں گے اور پانچویں سال ہم سیاست کریں گے۔ پہلے 4 سالوں میں کوئی جلسہ، جلوس یا سیاسی سرگرمی آصف زرداری کی سربراہی میں نہیں ہوتی رہی۔ آصف زرداری نے صدارت کا عہدہ بڑے اچھے طریقے سے نبھایا، جس طرح انہوں نے اپوزیشن کو ساتھ ملا کے رکھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو ابھی نوجوان ہے، اس کے بہت سال آگے پڑے ہیں۔ نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز نے اپنے والد کے بل بوتے پر اپنی ذات کو آمرانہ سا دکھایا ہے جس کی وجہ سے وہ عوام کے سامنے اس طرح ابھر کر نہ آسکیں جس طرح بلاول آئے۔

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے