28.2 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

انگلینڈ کے ہاتھوں شکست، پاکستان کو ورلڈ کپ کے لالے پڑ گئے

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

انگلینڈ کے ہاتھوں ون ڈے سیریز میں کلین سویپ سے پاکستان کے ورلڈ کپ 2023ء کے لیے براہِ راست کوالیفائی کرنے کے امکانات کو سخت ٹھیس پہنچی ہے۔

سیریز کے آغاز سے پہلے انگلینڈ کے کئی کھلاڑیوں کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا جس کے بعد انگلینڈ نے دوسرے درجے کی ٹیم کا اعلان کیا تھا کیونکہ پورا فرسٹ چوائس اسکواڈ آئسولیشن میں چلا گیا تھا۔

پاکستان کے پاس سنہری موقع تھا کہ وہ انگلینڈ کو سیریز میں شکست دے کر ‘کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ’ کے ٹیبل میں دوسرے نمبر پر آ جاتا، لیکن پہلے دونوں میچز میں بھیانک کھیل پیش کرنے اور آخری میں سر توڑ کوشش کے باوجود پاکستان کے نصیب میں ہار ہی آئی اور تینوں میچز میں شکست کھا کر وہ ٹیبل پر چوتھے نمبر پر آ گیا ہے۔

کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ ٹیبل میں پاکستان اب تک صرف چار میچز جیت پایا ہے اور پانچ میں شکست کھائی ہے۔ اس سپر لیگ میں کُل 13 ٹیمیں شامل ہیں جن میں 12 آئی سی سی کے مکمل رکن ہیں اور ایک نیدرلینڈز ہے۔ میزبان بھارت کے علاوہ سپر لیگ کی ٹاپ 7 ٹیمیں براہِ راست ورلڈ کپ 2023ء کے لیے کوالیفائی کریں گی۔ باقی پانچ ٹیموں کو ایک کوالیفائنگ ٹورنامنٹ کھیلنا پڑے گا، جس سے مزید دو ٹیمیں ورلڈ کپ تک پہنچیں گی۔

سپر لیگ میں ہر ٹیم کو ایک جیت پر 10 پوائنٹس ملتے ہیں، ٹائی ہونے یا میچ کا نتیجہ نہ نکلنے پر پانچ جبکہ شکست پر کوئی پوائنٹ نہیں۔ ہر ٹیم آٹھ مختلف ٹیموں کے ساتھ کھیلے گی، چار مرتبہ ہوم سیریز اور باقی اُس ملک کے میدانوں پر اور یہ سلسلہ مارچ 2023ء تک جاری رہے گا۔

اس وقت ٹیبل پر ورلڈ چیمپئن انگلینڈ پہلے نمبر پر ہے جو اپنے 15 میں سے 9 میچز جیتا ہے جبکہ بنگلہ دیش دوسرے ، آسٹریلیا تیسرے اور پاکستان چوتھے نمبر پر ہے، لیکن وہ اپنے آدھے سے بھی کم میچز جیتا ہے۔ دورۂ انگلینڈ سے پہلے اس نے اپنی تینوں آخری ون ڈے سیریز جیتی تھیں، لیکن یہ کمزور جنوبی افریقہ، آسان حریف زمبابوے اور سنگین مسائل سے دوچار سری لنکا کے خلاف تھیں۔ آئی سی سی کے فیوچر ٹورز پروگرام کے تحت پاکستان کو ستمبر میں افغانستان کا سامنا کرنا ہے۔ اس کے بعد اس سال نیوزی لینڈ اور ویسٹ انڈیز کے مشکل دورے کرنے ہیں، جس کے بعد فروری اور مارچ میں آسٹریلیا جانا ہوگا، یعنی وہ جگہ جہاں پاکستان کو جیتے ہوئے سال نہیں دہائیاں گزر چکی ہیں۔

کیا کرکٹ 2028ء کے اولمپکس میں شامل ہوگا؟

اس عرصے کے دوران پاکستان بنگلہ دیش، بھارت، آئرلینڈ اور سری لنکا کے خلاف کوئی سیریز نہیں کھیلنی۔ چلیں بنگلہ دیش اور بھارت کے خلاف نہ کھیل کر تو شکر ہی ادا کیا جا سکتا ہے لیکن باقی دو آسان حریفوں کے خلاف کوئی موقع نہ ملنے سے پاکستان کے کوالیفائی کرنے کے امکانات متاثر ہوں گے۔

اب پاکستان کی ورلڈ کپ 2023ء کے لیے کوالیفائی کرنے کا راستہ چیلنجز سے بھرپور ہے، اسے بہت پھونک پھونک کر قدم رکھنا ہوں گے کیونکہ گزشتہ ورلڈ کپ میں براہ راست جگہ پانے والی دو ٹیمیں تو اگلے عالمی کپ میں نہیں پہنچیں گی۔ اس وقت سری لنکا کے ٹاپ 8 میں آنے کے امکانات بہت کم ہیں۔ اس کے مقابلے میں افغانستان، جو 2019ء ورلڈ کپ میں آخری نمبر پر آیا تھا، کوالیفائی کرنے کے لیے سب سے موزوں مقام پر ہیں اور اس کے امکانات بہت روشن ہیں۔ اس لیے لگتا یہی ہے کہ جنوبی افریقہ، ویسٹ انڈیز، بنگلہ دیش یا پاکستان میں سے کسی کو ورلڈ کپ 2023ء تک پہنچنے کے لیے کوالیفائنگ ٹورنامنٹ کھیلنا پڑے گا۔

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے