25.7 C
Islamabad
پیر, اگست 2, 2021

اولمپکس، جیتنے والا خود کو تمغا پہنائے گا

تازہ ترین

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...
- Advertisement -

اولمپکس کے دوران جیتنے والوں کھلاڑیوں کو تمغا ملنے کی تقریب اِس مرتبہ کچھ مختلف ہوگی، کیونکہ فاتحین کو کہا جائے گا کہ وہ اپنے تمغے خود پہنیں۔

یعنی اس مرتبہ جیتنے والوں کو بین الاقوامی اولمپک کمیٹی کے کسی رکن کی جانب سے تمغا پہنائے جانے کی رسم ادا نہیں ہوگی۔ بلکہ جیتنے والوں کو اپنا تمغا خود طشتری میں سے اٹھانا ہوگا اور خود پہننا ہوگا۔

انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کے صدر تھامس باک نے بتایا ہے کہ 339 تقریبات میں کسی کو تمغے نہیں پہنائے جائیں گے۔ تمغے کھلاڑیوں کو ایک طشتری میں دیے جائیں گے اور پھر وہ کھلاڑی اپنا میڈل خود پہنیں گے یا پہنیں گی۔ یہ بھی یقینی بنایا جائے گا کہ جو شخص طشتری میں تمغے رکھے گا وہ جراثیم سے پاک دستانے پہن کر ایسا کرے، تاکہ کھلاڑی کو یقین ہو سکے کہ اُن سے پہلے اِن تمغوں کو کسی نے نہیں چھوا۔

کرونا وائرس، کیا ٹوکیو اولمپکس منسوخ ہو جائیں گے؟

اولمپکس میں تقریبات کے دوران سماجی فاصلہ بھی حالیہ یورو 2020ء کے مقابلے میں یکسر مختلف ہوگا۔ جہاں فائنل کی دونوں ٹیموں اٹلی اور انگلینڈ کو یوئیفا کے صدر الیگزینڈر سیفرین نے تمغے پہنائے تھے۔ بلکہ میچ کے اطالوی ہیرو گول کیپر گیان لوگی دوناروما نے تو تمغا پہنانے والے سے ہاتھ بھی ملا لیا تھا۔

دوسری جانب انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کہتی ہے کہ ٹوکیو میں تقریبات کے دوران کوئی مصافحہ نہیں ہوگا، اور نہ ہی گلے لگنے کی بھی اجازت ہوگی۔

ہفتہ بھر میں اولمپکس کا آغاز ہونے والا ہے جو 23 جولائی سے شروع ہوں گے لیکن ٹوکیو میں 22 اگست تک کے لیے ہنگامی حالت نافذ ہے کیونکہ شہر میں کووِڈ کے مریض تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ اولمپک اسٹیڈیم میں غیر ملکی اور مقامی تماشائیوں کو آنے کی اجازت بھی نہیں ہوگی بلکہ کھیلوں میں حصہ لینے والے کھلاڑیوں کے رشتہ داروں کو بھی جاپان کے سفر کی اجازت نہیں۔ البتہ کھلاڑی اپنے اہلِ خانہ، دوستوں اور پرستاروں سے بذریعہ اسکرین منسلک ہو سکتے ہیں۔ فینز چھ سیکنڈز کی وڈیو کلپ بھیج سکتے ہیں جو میدان میں دکھائی جائیں گی۔

بالآخر اعلان ہو گیا، ٹوکیو اولمپکس میں تماشائی نہیں ہوں گے

اس کے علاوہ گزشتہ اولمپکس میں ریکارڈ کیا گیا تماشائیوں کا شور بھی اسٹیڈیم میں اسپیکرز پر چلایا جائے گا۔ جبکہ منتظمین نے ہر ملک سے ایسے گانے بھی طلب کیے ہیں جو ان کے کھلاڑی کھیل شروع ہونے سے پہلے سننا چاہیں گے یعنی یہ گانے بھی میدان میں چلائے جائیں گے۔

ٹوکیو اولمپکس کا انعقاد دراصل گزشتہ سال ہونا تھا لیکن کرونا وائرس کی وجہ سے انہیں مؤخر کر دیا گیا۔ اب بھی اولمپکس کے انعقاد پر بڑے پیمانے پر تنقید کی جا رہی ہے لیکن انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ معطل ہو جانے کی صورت میں دوبارہ انعقاد بہت مشکل ہو جائے گا اور جاپان کی اربوں ڈالرز کی سرمایہ کاری ڈوب جائے گی۔

اولمپکس نہ ہوئے تو جاپان کو اربوں ڈالرز کا نقصان ہوگا

مزید تحاریر

مقبوضہ کشمیر کے تاجر، پاک-بھارت تجارت شروع ہونے کے منتظر

صرف دو سال پہلے عامر عطا اللہ کہتے تھے کہ پاکستانی سرحد کے قریب واقع قصبہ اُڑی میں تاجر کی حیثیت سے ان کا...

گزشتہ 75 سالوں میں آبدوزوں کے صرف 2 شکار، ایک پاکستانی آبدوز نے کیا

دوسری جنگِ عظیم کے دوران دشمن کے بحری جہازوں کو تباہ کرنے میں آبدوزوں نے بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔ نازی جرمنی کی...

گھانا کی نئی قومی مسجد ایک اہم سیاحتی مقام بن گئی

مغربی افریقہ کے ملک گھانا کی نئی قومی مسجد ایک مقبول سیاحتی مقام بن گئی ہے اور نہ صرف مسلمان بلکہ غیر مسلم بھی...

تیل کا اخراج، تاریخ کے سب سے بڑے حادثات

اِس وقت کراچی کے ساحل پر ایک بحری جہاز 'ایم وی ہینگ ٹونگ 77' پھنسا ہوا ہے۔ گو کہ یہ ایک کنٹینر شپ ہے...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے