19.9 C
Islamabad
ہفتہ, دسمبر 4, 2021

پاکستان 2023ء میں 5جی لانچ کرے گا

تازہ ترین

ورلڈکپ کون جیتے گا؟ – احمدحماد

کرکٹ کانواں ورلڈ کپ ٹورنامنٹ ۲۰۰۷ء کے موسم بہار میں ویسٹ انڈیز میں کھیلا گیا۔ یہ ورلڈ کپ ون ڈے انٹرنیشنل میچوں پہ مشتمل...

بُزدار کا لاہور – احمدحماد

لاہورہزاروں سال پرانا شہر ہے۔یہاں کے باسی اس سے بہت پیار کرتے ہیں۔جس طرح عربی زبان بولنے والے دیگر زبانیں بولنے والوں کو گونگا...

مزاحمت لیکس – احمدحماد

بارہ اکتوبر ۱۹۹۹؁ء کے فوجی انقلاب کی دو کہانیاں ہیں۔ اور دونوں ہی عوام نے سن رکھی ہیں۔ ایک کہانی وہ ہے جو ہم...

شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ نہیں بنایا گیا، شہزاد اکبر

مشیر داخلہ واحتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن غلط بیانی کررہی ہے۔ شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ بنایا گیا...
- Advertisement -

پاکستان وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام 2023ء تک ملک میں جدید ترین 5جی ٹیکنالوجی لانے کا ہدف رکھتی ہے۔

ملک میں گزشتہ تین سال کے دوران 1.2 ارب ڈالرز کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری سے ٹیلی کام انڈسٹری کا حجم 16.9 ارب ڈالرز تک پہنچ چکا ہے اور وزارت کے مطابق غیر ملکی سرمایہ کاروں نے بھی 5جی کے حوالے سے اس ہدف کا خیر مقدم کیا ہے۔

ٹیلی کام سیکٹر کی کارکردگی کے حوالے سے حال ہی میں وزیر اعظم عمران خان کو ایک بریفنگ دی گئی، جس میں وزارت نے بتایا کہ ملک کی ڈجیٹائزیشن کی ضروریات پوری کرنے اور 5جی جیسی مستقبل کی ٹیکنالوجی کے لیے یونیورسل سروس فنڈ (USF) کی جانب سے "ڈیپ فائبرائزیشن” منصوبے شروع کیے گئے ہیں تاکہ ٹیلی کام سروسز اور انٹرنیٹ دور دراز اور پسماندہ علاقوں تک پھیلایا جائے۔

اس منصوبے کے تحت 2018ء سے 2022ء کے دوران ملک بھر میں 10,000 کلومیٹرز سے زیادہ کی آپٹیکل فائبر کیبل بچھائی جائے گی جو 1,175 قصبوں اور یونین کونسلز میں تیز رفتار انٹرنیٹ فراہم کر رہی ہے۔ وزارت نے کہا کہ USF کے منصوبے بلوچستان کی 1,800 کلومیٹرز طویل شاہراہوں کے جال کے ساتھ بھی پھیل رہے ہیں، جو ان علاقوں کا احاطہ کررہے ہیں جہاں پہلے یہ خدمات موجود ہی نہیں تھیں۔

پاکستان “جامع انٹرنیٹ اشاریے” میں 120 ممالک میں 90 ویں نمبر پر

ڈیپ فائبرائزیشن پروجیکٹ کی اہمیت پر بات کرتے ہوئے وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام سید امین الحق نے کہا کہ حکومت ‏2022-23ء کے اختتام تک آئی ٹی سروسز سے 5 ارب ڈالرز تک کی برآمدات حاصل کرنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ "ہم چھوٹے قصبات تک سستے اور تیز رفتار انٹرنیٹ کی فراہمی کو یقینی بنائیں گے اور مجھے یقین ہے کہ ان اقداماتسے خیبر پختونخوا اور گلگت بلتستان کی لڑکیاں اپنے علاقوں میں بطور فری لانسر کام کر کے تیزی سے آگے بڑھیں گی۔”

‏‏2020-21ء میں پاکستان کی آئی ٹی سروسز کی برآمدات 47 فیصد اضافے کے ساتھ 2.1 ارب ڈالرز تک پہنچی تھیں۔

اس موقع پر پیش کردہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ مستقبل کی ڈجیٹل ترقی کے لیے ٹیلی کام انفرا اسٹرکچر کی تعمیر میں USF نے جامع کردار ادا کیا ہے اور 29 ارب روپے مالیت کے 43 منصوبے ایسے علاقوں میں شروع کیے ہیں جہاں یہ خدمات یا تو سرے سے ہی موجود نہیں تھی یا پھر کمزور تھیں۔ ان میں جنوبی بلوچستان، سابق قبائلی علاقہ جات اور اندرونِ سندھ کے 65 سے زیادہ اضلاع شامل ہیں کہ جن کی مجموعی آبادی 2.5 کروڑ سے زیادہ ہے۔

وزارت نے کہا کہ آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کو جدید موبائل سروسز فراہم کرنے کے لیے آئندہ اسپیکٹرم نیلامی سے ان علاقوں میں ٹیلی کام اور براڈ بینڈ سروسز کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔

چین اور یورپ کو ملانے والی 12 ہزار کلومیٹرز طویل انٹرنیٹ کیبل اور ایک نیا ہنگامہ

ملک میں اس وقت آٹھ سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارکس موجود ہیں جبکہ پاکستان سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈ (PSEB) پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت درمیانے اور چھوٹے شہروں میں مزید 32 پارکس قائم کرے گا۔ جن سے سافٹ ویئر ڈیولپمنٹ کی صنعت کو فروغ حاصل ہوگا اور ملک میں روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔ اس موقع پر یہ بھی بتایا گیا کہ پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں 40 انفارمیشن ٹیکنالوجی کمپنیاں درج ہیں۔

وزارت نے کہا کہ انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ٹیلی کام سیکٹر کی ترقی سے پیدا ہونے والے چیلنجز اور ضروریات کو پورا کرنے کے لیے بھی کئی پالیسی منصوبے شروع کیے گئے ہیں، جن میں پاکستان کی پہلی سائبر سکیورٹی پالیسی کی منظوری بھی شامل ہے۔

مزید تحاریر

ورلڈکپ کون جیتے گا؟ – احمدحماد

کرکٹ کانواں ورلڈ کپ ٹورنامنٹ ۲۰۰۷ء کے موسم بہار میں ویسٹ انڈیز میں کھیلا گیا۔ یہ ورلڈ کپ ون ڈے انٹرنیشنل میچوں پہ مشتمل...

بُزدار کا لاہور – احمدحماد

لاہورہزاروں سال پرانا شہر ہے۔یہاں کے باسی اس سے بہت پیار کرتے ہیں۔جس طرح عربی زبان بولنے والے دیگر زبانیں بولنے والوں کو گونگا...

مزاحمت لیکس – احمدحماد

بارہ اکتوبر ۱۹۹۹؁ء کے فوجی انقلاب کی دو کہانیاں ہیں۔ اور دونوں ہی عوام نے سن رکھی ہیں۔ ایک کہانی وہ ہے جو ہم...

شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ نہیں بنایا گیا، شہزاد اکبر

مشیر داخلہ واحتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن غلط بیانی کررہی ہے۔ شہبازشریف کے خلاف لندن میں کوئی مقدمہ بنایا گیا...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے