17 C
Islamabad
جمعرات, اکتوبر 29, 2020

عام عادتیں جو آپ کو ایک ناپسندیدہ شخصیت بناتی ہیں

تازہ ترین

سلیکون ویلی میں بھارتی انجینئرز کا راج، اپنے ساتھ ذات پات کا نظام بھی لے آئے

جب بینجمن کائیلا 1999ء میں بھارت سے ہجرت کرکے امریکا پہنچے تو انہوں نے ایک امریکی ٹیک کمپنی میں ملازمت کے لیے درخواست جمع...

باکسنگ ڈے ٹیسٹ میں 25 ہزار تماشائی ہوں گے

ہر سال 26 دسمبر کو آسٹریلیا میں باکسنگ ڈے کے موقع پر ٹیسٹ میچ کھیلا جاتا ہے اور رواں سال یہ مقابلہ آسٹریلیا اور...

دھات سے بنا سیارچہ دریافت، مالیت ہماری دنیا کی کُل معیشت سے ہزاروں گُنا زیادہ

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے 'ناسا' نے غیر معمولی دھاتوں کا حامل ایک سیارچہ (asteroid) دریافت کر لیا ہے، جس کی مالیت کا اندازہ دنیا...

غیر ملکیوں کے لیے خوشخبری، سعودی عرب "کفالۃ” نظام کا خاتمہ کرنے لگا

سعودی عرب غیر ملکی کارکنوں کے لیے "کفالۃ" کے نظام کو منسوخ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے، جس کی جگہ آجرین اور ملازمین...

یہ غلط فہمی عام پائی جاتی ہے کہ کسی کے ہر دل عزیز ہونے کا تعلق اصل میں قسمت سے ہے، یعنی لوگ سمجھتے ہیں کہ کسی کا خوبصورت ہونا یا بہترین سماجی زندگی رکھنا یا پھر خداداد صلاحیتوں کا حامل ہونے کی وجہ سے ہی لوگ دوسروں کو پسند کرتے ہیں جبکہ حقیقت اس کے اُلٹ ہے۔ دوسروں کی نظر میں کوئی مقام حاصل کرنا دراصل آپ کے اپنے ہاتھ میں ہے۔

امریکا کی یونیورسٹی آف کیلیفورنیا کی ایک تحقیق میں ان 500 کیفیات کی درجہ بندی کی گئی ہے جس کی بنیاد پر لوگ دوسروں کو پسند کرتے ہیں۔ اور دلچسپ بات یہ ہے کہ سماجی زندگی، عقل یا پُرکشش شخصیت ہونے سے مقبول ہونے کا سرے سے کوئی تعلق ہی نہیں پایا گیا بلکہ کسی کے پسندیدہ شخصیت ہونے کا براہِ راست تعلق خلوص، دیانت داری اور دوسروں کو سمجھنے کی صلاحیت سے ہے۔

آئیے آپ کو اُن عام عادات کے بارے میں بتاتے ہیں جن کی وجہ سے لوگ آپ کو پسندیدگی کی نگاہ سے نہیں دیکھتے:

بہت زیادہ سنجیدگی

لوگ جذبات کا اظہار کرنے والے افراد کو زیادہ پسند کرتے ہیں۔ بہت زیادہ سنجیدگی دوسرے لوگوں میں عدم دلچسپی کو ظاہر کرتی ہے۔ ان لوگوں کو زیادہ پسند کیا جاتا ہے جو اپنے کام اور زندگی کے درمیان توازن پیدا کرتے ہیں۔ کام پر بھی وہ سنجیدگی کے ساتھ ساتھ دوستانہ رویہ بھی رکھتے ہیں۔


سوالات نہ کرنا

گفتگو کے دوران لوگ جو سب سے بڑی غلطی کرتے ہیں وہ یہ ہے کہ اُن کی زیادہ توجہ اس بات پر ہوتی ہے کہ اس بات کے جواب میں انہوں نے کیا بولنا ہے؟ بجائے اس کے کہ سامنے والے کی بات غور سے سنیں اور اس سے اٹھنے والے سوالات سامنے لائیں۔ یہ ظاہر کرتا ہے کہ وہ دوسروں کی گفتگو سننے میں نہیں بلکہ اپنی بات کہنے میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں۔ اس کا بہترین حل یہی ہے کہ سوالات اٹھائے جائیں۔ آپ حیران رہ جائیں گے کہ اس طرح آپ دوسروں کی نظر میں کتنا احترام اور عزت پائیں گے۔


جذباتی بلیک میلنگ

رونا دھونا، چیخنا چلانا اور بلیک میل کرنا کسی کو پسند نہیں ہوتا، یہ ظاہر کرتا ہے کہ جذباتی طور پر آپ کُند ذہن ہیں اور ایسی غیر مستحکم شخصیت رکھتے ہیں جس پر اعتبار نہیں کیا جا سکتا۔


عدم توجہی

گفتگو کے دوران اگر آپ اپنا فون نکال لیتے ہیں اور بجائے سامنے والے کی آنکھوں کے اپنے موبائل کی اسکرین پر نظریں جما تے ہیں تو گویا آپ اپنے لیے خود مسئلہ کھڑا کر رہے ہیں۔ جب کوئی آپ سے گفتگو کر رہا ہو تو پوری توجہ اس کی بات پر رکھیں۔


غیبت

یہ تو ویسے ہی گناہ ہے لیکن اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ کسی کی ناپسندیدہ شخصیت کے بارے میں الٹی سیدھی باتیں کرکے آپ اس کی نظر میں مقام حاصل کرلیں گے تو یہ آپ کی بھول ہے۔ اصل میں غیبت کرتا ہوا آدمی ہمیشہ بہت منفی شخصیت کا حامل لگتا ہے اور وہ ہرگز کسی کی برائی کرکے دوسروں کے لیے محبوب شخصیت نہیں بن سکتا۔


بند ذہنیت

اگر آپ چاہتے ہیں کہ لوگ آپ کو پسندیدگی کی نگاہ سے دیکھیں تو آپ کو اپنا ذہن کھلا رکھنا ہوگا۔ کوئی شخص کسی ایسے فرد سے بات نہیں کرنا چاہے گا جو کسی معاملے پر اپنا ذہن پہلے سے بنا چکا ہو اور اس موضوع پر کسی کی نہ سنتا ہو۔ کھلا ذہن کام کے لیے بھی بہت اہمیت رکھتا ہے کیونکہ اسی سے نئے خیالات جنم لیتے ہیں۔


بہت جلد کھل جانا

گو کہ کھلی شخصیت ہونا ضروری ہے لیکن بہت جلد اور بہت زیادہ کھل جانا غلط نتائج دیتا ہے۔ اپنے ذاتی مسائل کو خود تک محدود رکھیں کیونکہ اپنی شخصیت کو کھول کر بیان کرنا جہاں گفتگو کے توازن کو بگاڑ سکتا ہے وہیں آپ کے تاثر کو بھی خراب کر سکتا ہے۔


سوشل میڈیا کا بے جا استعمال

تحقیق نے ظاہر کیا ہے کہ جو لوگ سوشل میڈیا پر بہت زیادہ بات کرتے ہیں انہیں کم پسند کیا جاتا ہے۔ بلاشبہ سوشل میڈیا آج جذبات کے اظہار کا ایک اہم ذریعہ ہے لیکن آپ کھانے میں کیا کھا رہے ہیں؟ آج آپ چہل قدمی کے لیے کون سے پارک میں گئے یا آپ کی "آج کی سیلفی” سے بہت کم لوگوں کو دلچسپی ہوتی ہے۔ اس لیے یہاں بھی اعتدال ضروری ہے۔

مزید تحاریر

سلیکون ویلی میں بھارتی انجینئرز کا راج، اپنے ساتھ ذات پات کا نظام بھی لے آئے

جب بینجمن کائیلا 1999ء میں بھارت سے ہجرت کرکے امریکا پہنچے تو انہوں نے ایک امریکی ٹیک کمپنی میں ملازمت کے لیے درخواست جمع...

باکسنگ ڈے ٹیسٹ میں 25 ہزار تماشائی ہوں گے

ہر سال 26 دسمبر کو آسٹریلیا میں باکسنگ ڈے کے موقع پر ٹیسٹ میچ کھیلا جاتا ہے اور رواں سال یہ مقابلہ آسٹریلیا اور...

دھات سے بنا سیارچہ دریافت، مالیت ہماری دنیا کی کُل معیشت سے ہزاروں گُنا زیادہ

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے 'ناسا' نے غیر معمولی دھاتوں کا حامل ایک سیارچہ (asteroid) دریافت کر لیا ہے، جس کی مالیت کا اندازہ دنیا...

غیر ملکیوں کے لیے خوشخبری، سعودی عرب "کفالۃ” نظام کا خاتمہ کرنے لگا

سعودی عرب غیر ملکی کارکنوں کے لیے "کفالۃ" کے نظام کو منسوخ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے، جس کی جگہ آجرین اور ملازمین...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے