17 C
Islamabad
جمعرات, اکتوبر 29, 2020

انگلینڈ کا 2021ء میں پاکستان کے دورے پر غور

تازہ ترین

سلیکون ویلی میں بھارتی انجینئرز کا راج، اپنے ساتھ ذات پات کا نظام بھی لے آئے

جب بینجمن کائیلا 1999ء میں بھارت سے ہجرت کرکے امریکا پہنچے تو انہوں نے ایک امریکی ٹیک کمپنی میں ملازمت کے لیے درخواست جمع...

باکسنگ ڈے ٹیسٹ میں 25 ہزار تماشائی ہوں گے

ہر سال 26 دسمبر کو آسٹریلیا میں باکسنگ ڈے کے موقع پر ٹیسٹ میچ کھیلا جاتا ہے اور رواں سال یہ مقابلہ آسٹریلیا اور...

دھات سے بنا سیارچہ دریافت، مالیت ہماری دنیا کی کُل معیشت سے ہزاروں گُنا زیادہ

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے 'ناسا' نے غیر معمولی دھاتوں کا حامل ایک سیارچہ (asteroid) دریافت کر لیا ہے، جس کی مالیت کا اندازہ دنیا...

غیر ملکیوں کے لیے خوشخبری، سعودی عرب "کفالۃ” نظام کا خاتمہ کرنے لگا

سعودی عرب غیر ملکی کارکنوں کے لیے "کفالۃ" کے نظام کو منسوخ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے، جس کی جگہ آجرین اور ملازمین...

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) 2021ء کے اوائل میں ایک مختصر سیریز کھیلنے کے لیے پاکستان آنے پر غور کر رہا ہے۔ موجودہ عالمی چیمپیئن انگلینڈ نے آخری بار 2005ء میں پاکستان کا دورہ کیا تھا۔

پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کو بہت بڑا دھچکا 2009ء میں پہنچا، جب دہشت گردوں نے لاہور میں سری لنکا کی قومی کرکٹ ٹیم پر حملہ کیا تھا۔ کئی سال تک پاکستان کے میدان انٹرنیشنل کرکٹ سے محروم رہے البتہ حالیہ چند سالوں میں سری لنکا، زمبابوے، ویسٹ انڈیز اور بنگلہ دیش پاکستان کا دورہ کر چکے ہیں۔

باضابطہ طور پر جاری کردہ بیان میں انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے کہا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ بات چیت کے بعد اب ہم تصدیق کر سکتے ہیں کہ ای سی بی کو 2021ء کے اوائل میں پاکستان میں ایک مختصر سیریز کھیلنے کا دعوت نامہ موصول ہوا ہے۔ "ہم پاکستان میں کرکٹ کی واپسی کا خیر مقدم کرتے ہیں اور اس حوالے سے جو کچھ ہوا، وہ ضرور کریں گے۔”

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ "کھلاڑیوں اور عملے کے اراکین کا تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے اور سکیورٹی معاملات کے ساتھ ساتھ کرونا وائرس کی وباء بھی انگلینڈ کی تشویش کا باعث ہے۔”

ای سی بی کا کہنا ہے کہ وہ آئندہ ہفتوں میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے علاوہ دیگر شراکت داروں کے ساتھ بھی رابطہ کرے گا، جس کے بعد ہی کوئی حتمی فیصلہ لیا جائے گا۔

گو کہ ای سی بی نے اس جانب کوئی اشارہ نہیں دیا، لیکن برمنگھم میں پیدا ہونے والے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو وسیم خان کا کہنا ہے کہ ہم نے 13 سے 20 جنوری کی تاریخیں دی ہیں اور ساتھ اس امید کا اظہار کیا کہ خوشخبری ملے گی۔

وسیم خان نے کہا کہ "یہ بہت اہم دورہ ہوگا اور ایک میزبان کی حیثیت سے پاکستان کی ساکھ کو کافی بہتر بنائے گا۔ ”

ایک اندازے کے مطابق یہ دورہ تین ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز پر مشتمل ہوگا۔

پاکستان نے رواں سال اگست میں برطانیہ میں کرونا وائرس کی بدترین صورت حال کے باوجود تین ٹیسٹ اور تین ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلنے کے لیے انگلینڈ کا دورہ کیا تھا۔ پاکستان کے اس قدم کو بہت سراہا گیا تھا کیونکہ پاکستان، اور اس سے پہلے ویسٹ انڈیز نے بھی، انگلینڈ کا دورہ کرکے ای سی بی کو 366 ملین ڈالرز کے اس نقصان سے بچا لیا، جو ان میچز کے عدم انعقاد سے ای سی بی کو برداشت کرنا پڑتا۔

اس دورے کے بعد انگلینڈ کے ٹیسٹ کپتان جو روٹ نے بھی کہا تھا کہ وہ پاکستان کا دورہ کرنا پسند کریں گے۔

ویسے انگلینڈ کو اگلے مہینے جنوبی افریقہ کا دورہ کرنا ہے، جہاں اس وقت بورڈ میں بدعنوانی کا اسکینڈل سامنے آنے کے بعد حکومت کی مداخلت کی خبریں چل رہی ہیں اور ایک بحران جنم لینے والا ہے۔ پھر اُس کے بعد جنوری میں سری لنکا کا دورہ طے شدہ ہے کہ جو رواں سال مارچ میں کرونا وائرس کی وجہ سے مؤخر کیا گیا تھا۔ اس کے بعد انگلینڈ بھارت میں ٹیسٹ سیریز کھیلے گا۔ عین ممکن ہے کہ رواں سال کی انڈین پریمیئر لیگ کی طرح یہ سیریز بھی متحدہ عرب امارات ہی میں کھیلی جائے کیونکہ بھارت اس وقت دنیا میں کرونا وائرس کا دوسرا سب سے بڑا گڑھ بنا ہوا ہے۔

بہرحال، اگر انگلینڈ نے دورۂ پاکستان کی تصدیق کر دی ہے تو یہ پاکستان کرکٹ کے لیے بہت بڑی خبر ہوگی اور آئندہ آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور دیگر اہم ممالک کے دوروں کی راہ بھی ہموار کرے گی۔

مزید تحاریر

سلیکون ویلی میں بھارتی انجینئرز کا راج، اپنے ساتھ ذات پات کا نظام بھی لے آئے

جب بینجمن کائیلا 1999ء میں بھارت سے ہجرت کرکے امریکا پہنچے تو انہوں نے ایک امریکی ٹیک کمپنی میں ملازمت کے لیے درخواست جمع...

باکسنگ ڈے ٹیسٹ میں 25 ہزار تماشائی ہوں گے

ہر سال 26 دسمبر کو آسٹریلیا میں باکسنگ ڈے کے موقع پر ٹیسٹ میچ کھیلا جاتا ہے اور رواں سال یہ مقابلہ آسٹریلیا اور...

دھات سے بنا سیارچہ دریافت، مالیت ہماری دنیا کی کُل معیشت سے ہزاروں گُنا زیادہ

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے 'ناسا' نے غیر معمولی دھاتوں کا حامل ایک سیارچہ (asteroid) دریافت کر لیا ہے، جس کی مالیت کا اندازہ دنیا...

غیر ملکیوں کے لیے خوشخبری، سعودی عرب "کفالۃ” نظام کا خاتمہ کرنے لگا

سعودی عرب غیر ملکی کارکنوں کے لیے "کفالۃ" کے نظام کو منسوخ کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے، جس کی جگہ آجرین اور ملازمین...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے