18.4 C
Islamabad
بدھ, دسمبر 2, 2020

عام عادتیں، جو انجانے میں صحت کو نقصان پہنچاتی ہے

تازہ ترین

شہباز، حمزہ نے پیرول پر رہائی میں توسیع کی درخواست دی، پھر بھی نہیں لی، وزیر قانون پنجاب

وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا ہے کہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ شہباز کی درخواست پر پیرول کی...

برطانیہ: کورونا ویکسین کی منظوری دے دی گئی، پاکستان میں جنوری تک دستیاب ہوگی

برطانیہ نے فائزر بائیوٹک کورونا ویکسین کی منظوری دے دی، برطانوی وزارت صحت کے مطابق کورونا ویکسین کی دستیابی 7 سے 9 دسمبر کے...

کرونا وائرس اور معاشی بحران، پاکستان میں ناکافی غذائیت کا مسئلہ مزید پیچیدہ ہو گیا

اگست 2018ء میں عمران خان نے برسرِ اقتدار آتے ہی جن مسائل سے نمٹنے کا عزم ظاہر کیا تھا، ان میں ناکافی غذائیت (malnutrition)...

ہم اسلام آباد کے راستے میں ہوں گے اور حکومت چلی جائے گی، رانا ثناء اللہ

پاکستان مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ لاہور میں ہونے والے پی ڈی ایم جلسے میں...
- Advertisement -

ہم سب میں کوئی نہ کوئی عادت تو ہوتی ہی ہے، لیکن بدقسمتی سے ساری عادتیں اچھی نہیں ہوتیں، کچھ عادتیں خطرناک بھی ہوتی ہیں۔ ہمیں علم ہی نہیں ہوتا کہ کون سی بے ضرر سی نظر آنے والی عادت صحت کو ناقابلِ تلافی نقصان پہنچاتی ہے۔

آئیے آپ کو ایسی چند عادتوں کے بارے میں بتاتے ہیں جو صحت کے لیے نقصان دہ ہوتی ہیں۔ ہو سکتا ہے آپ ان میں سے کسی عادت کا شکار ہوں؟

ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھنا


یہ بہت عام عادت ہے، آپ کو عموماً ہر محفل میں ایسے لوگ ملیں گے جو ٹانگ پر ٹانگ رکھ کر بیٹھتے ہیں۔ تحقیق نے ثابت کیا ہے کہ یہ عادت صحت کے لیے نقصان دہ ہے۔ چاہے آپ فرش پر بیٹھے ہوں یا کرسی پر، اس طرح بیٹھنے سے آپ کو کئی امراض ہو سکتے ہیں جیسا کہ نسوں کا پھولنا، ہائپرٹینشن اور اعصابی پٹھوں کو نقصان وغیرہ۔


پرندوں کو دانہ ڈالنا


کتنی معصومانہ سرگرمی لگتی ہے نا؟ لوگ نہ صرف خود ایسا کرتے ہیں بلکہ اپنے بچوں کو بھی ساتھ لے جاتے ہیں۔ بدقسمتی سے کئی ماہرین کا کہنا ہے کہ پرندوں کو دانہ ڈالنے کی سرگرمی صحت کے لیے اچھی نہیں۔ دراصل شہروں میں پائے جانے والے پرندے جیسا کہ کبوتر اور چیلیں وبائی امراض پھیلانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ تحقیق بتاتی ہے کہ ان پرندوں میں کسی وبائی مرض کی موجودگی کا امکان 50 فیصد سے زیادہ ہوتا ہے۔ مثلاً کبوتر نیو کاسل بیماری، خرگوش بخار، toxoplasmosis، listeriosis، salmonellosis، histoplasmosis، colibacillosis، ornithosis اور تپِ دق جیسے مرض ان معصوم کبوتروں کے ذریعے منتقل ہو سکتے ہیں۔ یہ بیماریاں صرف وبائی ہی نہیں بلکہ مہلک بھی ہیں۔


گھٹیا معیار کے چشمے


سن گلاسز یعنی دھوپ چشمے نہ صرف آپ کی خوبصورتی کو بڑھاتے ہیں بلکہ آپ کی آنکھوں کو خطرناک الٹرا وائلٹ شعاعوں سے بھی بچاتے ہیں۔ شعاعیں آپ کی آنکھ کے پردے کو سخت نقصان پہنچاتی ہے۔ لیکن ان سے بچاؤ کا انحصار چشمے کے معیار پر ہے۔ گھٹیا معیار کے سن گلاسز پہننے سے آنکھوں کو فائدے کے بجائے الٹا نقصان ہو سکتا ہے۔ گھٹیا سن گلاسز سے یہ الٹرا وائلٹ شعاعیں دوگنی مقدار میں آنکھوں میں داخل ہو سکتی ہیں، جن سے آنکھوں کے کینسر تک کا خطرہ ہو سکتا ہے۔ اگر آپ کے سن گلاسز معیاری نہیں تو اس سے بہتر ہے کہ آپ چشمہ ہی نہ لگائیں۔


بہت زیادہ پانی پینا


ہو سکتا ہے آپ کو یہ پڑھ کر حیرت ہوئی ہو لیکن ماہرین کہتے ہیں کہ بہت زیادہ پانی پینے سے فائدے کے بجائے الٹا نقصان ہوتا ہے۔

جس طرح بہت کم پانی پینا صحت کے لیے نقصان دہ ہے، اسی طرح بہت زیادہ پانی پینا بھی اچھا نہیں ہے۔ دراصل ہر شخص کی اپنی جسمانی ضروریات ہوتی ہے۔ مثلاً جو کھیل کود میں مشغول رہتا ہے یا جس کی جسمانی سرگرمی زیادہ ہے، اسے اس شخص کے مقابلے میں زیادہ پانی کی ضرورت ہوگی کہ جو سارا دن دفتر میں بیٹھ کر گزارتا ہے۔

پھر دن میں کتنا پانی پینا ہے؟ اس کا دارومدار آپ کی صحت پر بھی ہوتا ہے۔ مثلاً دل اور گردوں کے امراض رکھنے والے لوگوں کو زیادہ پانی نہیں پینا چاہیے۔ آسان سا اصول یہ ہے کہ پانی تب پئیں، جب طلب محسوس ہو، زبردستی نہ پئیں۔


گرم پانی سے ٹکور کرنا


جسم کے کسی حصے میں درد ہو تو ہمارے ہاں گرم یا ٹھنڈے پانی سے ٹکور کرنا عام سمجھاجاتا ہے کیونکہ اس سے درد فوراً ختم ہو جاتا ہے۔ لیکن گرم پانی سے ٹکور ہر جگہ کام نہیں کرتی۔ کچھ مرض ایسے ہوتے ہیں کہ جن میں گرم پانی کی ٹکور کرنے سے معاملہ مزید بگڑ جائے گا جیسا کہ پیٹ میں سوزش یا اندر خون بہنے کی صورت میں۔


پوپ کورن مائیکروویو اوون میں


کیا آپ مائیکرو ویو اوون میں پوپ کورن بنانا پسند کرتے ہیں؟ اگر ہاں تو انجانے میں اپنی صحت کو خود نقصان پہنچا رہے ہیں۔ طبی تحقیق نے ظاہر کیا ہے کہ مکئی میں ایک کیمیائی مادّہ diacetyl ہوتا ہے۔ جب اسے مائیکروویو پر گرم کیا جاتا ہے تو یہ بخارات بن جاتا ہے اور پھر آپ کے پھیپھڑوں میں داخل ہو کر انہیں نقصان پہنچا سکتا ہے۔ اس لیے مائیکرو ویو اوون میں پوپ کورن نہ بنائیں۔ اگر ایسا کرنا پڑ جائے تو کھانے سے پہلے انہیں ٹھنڈا کر لیں۔


کام کی جگہ پر کھانا پینا


بہت سے لوگ اپنے کام ہی کی جگہ پر کھانا پینا پسند کرتے ہیں، لیکن یہ بات ذہن میں رکھیں کہ کام کی جگہ کام کے لیے ہوتی ہے، کھانے کے لیے نہیں۔ اس جگہ پر بہت سے ایسے جراثیم ہو سکتے ہیں جو کھانے میں شامل ہو سکتے ہیں اور صحت کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔


بیٹھنے کا غلط انداز


درست انداز میں نہ بیٹھنے سے آپ کی صحت کو بہت نقصان پہنچتا ہے۔ آپ کے جسم کے درست حالت میں ہونے کا مطلب ہے کہ تمام اعضاء مناسب پوزیشن میں ہوں۔ اگر ایسا نہ ہو تو آپ کی ریڑھ کی ہڈی کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔ اس لیے یقینی بنائیں کہ آپ صحیح سے بیٹھیں۔ جیسا کہ:

  • آپ کا جسم کم از کم دو تہائی کرسی پر موجود ہو
  • کرسی کی لمبائی آپ کی رانوں کی لمبائی کے برابر ہو، تاکہ آپ جم کر بیٹھ سکیں
  • بیٹھنے کے دوران ٹانگ پر ٹانگ نہ رکھیں
  • یہ بات یقینی بنائیں کہ کرسی کا پچھلا حصہ آپ کی ریڑھ کی ہڈی کے مطابق ہو

مزید تحاریر

شہباز، حمزہ نے پیرول پر رہائی میں توسیع کی درخواست دی، پھر بھی نہیں لی، وزیر قانون پنجاب

وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا ہے کہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ شہباز کی درخواست پر پیرول کی...

برطانیہ: کورونا ویکسین کی منظوری دے دی گئی، پاکستان میں جنوری تک دستیاب ہوگی

برطانیہ نے فائزر بائیوٹک کورونا ویکسین کی منظوری دے دی، برطانوی وزارت صحت کے مطابق کورونا ویکسین کی دستیابی 7 سے 9 دسمبر کے...

کرونا وائرس اور معاشی بحران، پاکستان میں ناکافی غذائیت کا مسئلہ مزید پیچیدہ ہو گیا

اگست 2018ء میں عمران خان نے برسرِ اقتدار آتے ہی جن مسائل سے نمٹنے کا عزم ظاہر کیا تھا، ان میں ناکافی غذائیت (malnutrition)...

ہم اسلام آباد کے راستے میں ہوں گے اور حکومت چلی جائے گی، رانا ثناء اللہ

پاکستان مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ لاہور میں ہونے والے پی ڈی ایم جلسے میں...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے