23.3 C
Islamabad
منگل, اپریل 13, 2021

امریکی انتخابات کے بعد کیا ہوگا؟ ایک سینیٹر نے سب کچھ پہلے ہی بتا دیا تھا

تازہ ترین

ڈسکہ انتخاب کے بعد عوام بھی کہہ رہی ہے کہ گھر جاؤ، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن کے نائب صدر میاں حمزہ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کے پاس اقتدار میں رہنے کا اب...

سندھ حکومت نے سعید غنی سے تعلیم کا قلمدان واپس لینے کا فیصلہ کرلیا

سندھ کی صوبائی حکومت میں وزیر تعلیم و لیبر سعید غنی سے محکمہ تعلیم کا قلمدان لینے کا فیصلہ کرلیا گیا، ساتھ ہی کابینہ...

ن لیگ کو چاہیے کہ پیپلز پارٹی جیسی سیاست کرے، فواد چودھری

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن احتجاجی سیاست سے باہر آکر پیپلز پارٹی جیسی سیاست...

پیپلز پارٹی کو نوٹس مسلم لیگ ن نے نہیں، پی ڈی ایم نے بھیجا تھا، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ جس کے لیے کہا جاتا تھا کہ سیاست ختم ہوگئی اس...
- Advertisement -

یہ تقریباً دو ہفتے پرانی وڈیو ہے جو اِس وقت سوشل میڈيا پر وائرل ہو رہی ہے، لیکن کیوں؟ دراصل اس کلپ میں امریکی سینیٹر برنی سینڈرز اس سوال کا جواب دے رہے ہیں کہ صدارتی انتخابات میں کامیابی کون حاصل کرے گا؟ انہوں نے جس صورت حال کی پیشن گوئی کی، ہو بہو اب وہی ہو رہا ہے۔

یہ 23 اکتوبر کو نشر ہونے والا پروگرام "ٹُونائٹ شو اسٹارنگ جمی فالن” تھا جس میں برنی سینڈرز نے میزبان جمی فالن نے یہ سوال کیا تھا۔ جواب میں سینڈرز نے کہا تھا کہ "میرے خیال میں ہوگا یہ کہ پنسلوینیا، مشیگن، وسکونسن اور دوسری ریاستوں میں جہاں ووٹوں کی بڑی تعداد ڈاک کے ذریعے آئے گی۔ فلوریڈا یا ورمونٹ جیسی ریاستوں کے مقابلے میں وہاں انتخابات کے دن ان ووٹوں کی گنتی شروع نہیں ہو پائے گی، جس کی چند وجوہات ہیں۔ بہرحال، اس صورت حال کا مطلب یہ ہے کہ لاکھوں ووٹوں کی گنتی باقی ہوگی۔”

حقیقت یہی ہے کہ انتخابات کو گزرے تیسرا دن ہے اور اِس وقت بھی پنسلوینیا میں ڈاک کے ذریعے آنے والے ووٹوں کی گنتی چل رہی ہے۔

بہرحال، سینڈرز نے اپنی گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ "اب عین ممکن ہے کہ انتخابات والے ہی دن ہی رات 10 یہ حال ہو کہ ٹرمپ مشیگن سے جیت رہے ہوں، پنسلوینیا میں آگے ہوں، وسکونسن سے کامیابی حاصل کر رہے ہوں۔ پھر اچانک وہ ٹیلی وژن پر نمودار ہوں اور کہیں مجھے ایک مرتبہ پھر منتخب کرنے کا بہت شکریہ، کہانی ختم پیسہ ہضم!”

اس پیشن گوئی کےعین مطابق ڈونلڈ ٹرمپ نے بدھ کی رات ہی ایک نیوز کانفرنس میں یہی دعویٰ کیا تھا کہ وہ انتخابات جیت چکے ہیں۔

سینڈرز نے پیشن گوئی کی کہ "اگلے روز جب ڈاک سے آنے والے ووٹوں کی گنتی شروع ہوگی، تو ممکن ہے کہ بائیڈن ان ریاستوں میں کامیابی حاصل کر لیں۔ تب ٹرمپ کہیں گے کہ دیکھا؟ میں نے کہا تھا ناں کہ یہ پورا چکر ہی فراڈ ہے۔ میں نے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ ڈاک سے آنے والے ووٹوں سے دھاندلی کی جائے گی۔”

بالکل سینڈرز کے کہے کے عین مطابق بائیڈن واقعی مشیگن اور وسکونسن سے جیتے اور ٹرمپ نے اعلان کیا کہ وہ پنسلوینیا میں گنتی رکوانے کے لیے عدالت کا رخ کریں گے۔

سینڈرز نے اپنی بات ختم کرتے ہوئے کہا تھا کہ "یہ پورا معاملہ پریشان کُن ہے، میرے لیے اور دوسرے کئي لوگوں کے لیے بھی۔”

ٹوئٹر پر کئی صارفین نے اس وڈيو پر حیرت کا اظہار کیا ہے اور سینڈرز کو ‘جادوگر’ قرار دیا ہے۔

مزید تحاریر

ڈسکہ انتخاب کے بعد عوام بھی کہہ رہی ہے کہ گھر جاؤ، حمزہ شہباز

پاکستان مسلم لیگ ن کے نائب صدر میاں حمزہ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کے پاس اقتدار میں رہنے کا اب...

سندھ حکومت نے سعید غنی سے تعلیم کا قلمدان واپس لینے کا فیصلہ کرلیا

سندھ کی صوبائی حکومت میں وزیر تعلیم و لیبر سعید غنی سے محکمہ تعلیم کا قلمدان لینے کا فیصلہ کرلیا گیا، ساتھ ہی کابینہ...

ن لیگ کو چاہیے کہ پیپلز پارٹی جیسی سیاست کرے، فواد چودھری

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن احتجاجی سیاست سے باہر آکر پیپلز پارٹی جیسی سیاست...

پیپلز پارٹی کو نوٹس مسلم لیگ ن نے نہیں، پی ڈی ایم نے بھیجا تھا، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ جس کے لیے کہا جاتا تھا کہ سیاست ختم ہوگئی اس...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے