18.4 C
Islamabad
بدھ, دسمبر 2, 2020

جیٹ سوٹ پہن کر اڑنے والا حادثے میں چل بسا

تازہ ترین

شہباز، حمزہ نے پیرول پر رہائی میں توسیع کی درخواست دی، پھر بھی نہیں لی، وزیر قانون پنجاب

وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا ہے کہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ شہباز کی درخواست پر پیرول کی...

برطانیہ: کورونا ویکسین کی منظوری دے دی گئی، پاکستان میں جنوری تک دستیاب ہوگی

برطانیہ نے فائزر بائیوٹک کورونا ویکسین کی منظوری دے دی، برطانوی وزارت صحت کے مطابق کورونا ویکسین کی دستیابی 7 سے 9 دسمبر کے...

کرونا وائرس اور معاشی بحران، پاکستان میں ناکافی غذائیت کا مسئلہ مزید پیچیدہ ہو گیا

اگست 2018ء میں عمران خان نے برسرِ اقتدار آتے ہی جن مسائل سے نمٹنے کا عزم ظاہر کیا تھا، ان میں ناکافی غذائیت (malnutrition)...

ہم اسلام آباد کے راستے میں ہوں گے اور حکومت چلی جائے گی، رانا ثناء اللہ

پاکستان مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ لاہور میں ہونے والے پی ڈی ایم جلسے میں...
- Advertisement -

دبئی میں معروف جیٹ سوٹ پائلٹ ونس ریفت ایک حادثے میں چل بسے ہیں۔

36 سالہ فرانسیسی ایکسٹریم اسپورٹ ایتھلیٹ جیٹ مین فلائی سوٹ پہن کر اڑنے والے تاریخ کے دوسرے شخص تھے۔

حادثے میں ان کی وفات کا اعلان جیٹ مین ٹیم نے فیس بک پر کیا ہے، جن کے مطابق وہ دل گرفتگی کے ساتھ جیٹ مین پائلٹ ونسنٹ (ونس) ریفت کی وفات کا اعلان کرتے ہیں، جو 17 نومبر کی صبح دبئی میں ٹریننگ کے دوران ایک حادثے کا شکار ہو کر چل بسے۔ ونس ایک تربیت یافتہ کھلاڑی تھے اور ٹیم کے ہر دل عزیز اور باوقار رُکن تھے۔ ہماری دعائیں اُن کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔

گزشتہ پانچ سال کے دوران جیٹ پائلٹ کی حیثیت سے ریفت کی کئی وڈیوز بہت مشہور ہوئیں۔ جیٹ مین دراصل کاربن کے پروں سے بنی ایک ڈیوائس ہے جو واقعی انسان کو پرندہ بنا دیتی ہیں۔ اس کے چار جیٹ ٹربائن کی بدولت انسان ہوا میں 400 کلومیٹرز فی گھنٹے کی رفتار تک سے اڑ سکتا ہے۔ جیٹ مین کا یہ ڈیزائن 14 سال قبل مشہور جیٹ سوٹ پائلٹ ایو روسی کی پہلی پرواز کے بعد سے ممکن ہوا اور اسے بہت محفوظ تصور کیا جاتا تھا۔

لیکن زمین کے قریب پرواز کرنا ایک خطرناک عمل ہے۔ کیونکہ انجن یا الیکٹرانکس کی کوئی خرابی اگر انتہائی بلندی پر ہو جائے تو مسئلہ نہیں، پیراشوٹ پائلٹ کو بچا سکتا ہے لیکن زمین کے قریب پرواز ہو تو اسے پیراشوٹ نکالنے کا وقت ہی نہیں ملتا اور مل بھی جائے تو رفتار اتنی کم نہیں ہو پاتی کہ وہ آہستگی سے زمین پر اتر سکے۔

یہی وجہ ہے کہ مشہور جیٹ سوٹ پائلٹ ڈیوڈ مے مین اپنی زیادہ تر پروازیں پانی کے اوپر کرتے ہیں، کیونکہ کسی بھی مسئلے کی صورت میں وہ گیلے تو ہو جائیں گے لیکن زندہ ضرور بچیں گے۔

جیٹ مین نے پچھلے سال زمین سے براہ راست عمودی پرواز (VTOL) کی نئی صلاحیت کا اعلان کیا تھا۔ اس کے علاوہ پائلٹ کو ہوا میں معلق کرنے والا سسٹم بھی پیش کیا تھا۔ فروری 2020ء میں خود ریفت نے اس سسٹم کی صلاحیتوں کا زبردست مظاہرہ کیا تھا۔ انہوں نے دبئی میں ٹیک آف کیا اور کچھ دیر ہوا میں معلق رہنے کے بعد آسمان کی بلندیوں میں پہنچ گئے اور کئی کرتب بھی دکھائے۔

فی الحال حادثے کی تفصیلات جاری نہیں کی گئیں، لیکن ہو سکتا ہے کہ ریفت کو پیش آنے والا جان لیوا حادثہ اسی VTOL سسٹم کے کم بلندی پر استعمال کی وجہ سے ہوا ہو۔ بہرحال، جو بھی ہوا یہ بات یقینی ہے کہ ریفت نے ایک ایسی زندگی گزاری، جس کا زیادہ تر لوگ صرف خواب ہی دیکھ سکتے ہیں۔

وہ تجربہ کار اسکائی ڈائیورز کی اولاد تھے۔ انہوں نے 2000ء میں اپنا پہلا سولو جمپ بھی کیا تھا اور فری فلائنگ میں ورلڈ چیمپئن بھی بنے۔ اُن کی شادی تین سال پہلے ہی ہوئی تھی۔

مزید تحاریر

شہباز، حمزہ نے پیرول پر رہائی میں توسیع کی درخواست دی، پھر بھی نہیں لی، وزیر قانون پنجاب

وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا ہے کہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ شہباز کی درخواست پر پیرول کی...

برطانیہ: کورونا ویکسین کی منظوری دے دی گئی، پاکستان میں جنوری تک دستیاب ہوگی

برطانیہ نے فائزر بائیوٹک کورونا ویکسین کی منظوری دے دی، برطانوی وزارت صحت کے مطابق کورونا ویکسین کی دستیابی 7 سے 9 دسمبر کے...

کرونا وائرس اور معاشی بحران، پاکستان میں ناکافی غذائیت کا مسئلہ مزید پیچیدہ ہو گیا

اگست 2018ء میں عمران خان نے برسرِ اقتدار آتے ہی جن مسائل سے نمٹنے کا عزم ظاہر کیا تھا، ان میں ناکافی غذائیت (malnutrition)...

ہم اسلام آباد کے راستے میں ہوں گے اور حکومت چلی جائے گی، رانا ثناء اللہ

پاکستان مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ لاہور میں ہونے والے پی ڈی ایم جلسے میں...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے