8.9 C
Islamabad
منگل, جنوری 26, 2021

‏10 لاکھ ڈالرز کا منبر، عراق میں نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا

تازہ ترین

شاخِ زیتون پہ چہکتے گیلے تیتر – احمدحماد

قدیم یونان کے سات دانشمندوں سے ایک کا نام طالیس تھا۔ کہا جاتا ہے کہ یہ طالیس ہی تھا جس نے پہلے پہل یہ...

کورونا کے خاتمے تک قرضوں کی ادائیگی میں رعایت دی جائے، وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عالمی وبا کورونا وائرس کے ختم ہونے تک مقروض ممالک پر قرضہ واپسی کے حوالے سے...

جمعرات کو چاند عین خانہ کعبہ کے اوپر ہوگا

جمعرات 28 جنوری کو سعودی عرب کے مقامی وقت کے مطابق رات 12:43 پر چودہویں کا چاند عین خانہ کعبہ کے اوپر ہوگا۔ جدہ آسٹرونومی...

پاک-جنوبی افریقہ تاریخی ٹیسٹ، پاکستان ان کھلاڑیوں میں سے انتخاب کرے گا

پاک-جنوبی افریقہ تاریخی ٹیسٹ کل یعنی منگل سے کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں شروع ہو رہا ہے۔ پاکستان نے اپنے 20 رکنی ابتدائی اسکواڈ میں...
- Advertisement -

ایک ذاکر کے 10 لاکھ ڈالرز مالیت سے بنے منبر نے عراق میں نیا ہنگامہ کھڑا کر دیا ہے۔ ایک ایسے وقت میں جب ملک بدترین مالی بحران سے گزر رہا ہے اور انتہائی غربت بڑھنے کا خطرہ منڈلا رہا ہے، اس منبر پر تقریر کرتے ذاکر کو دیکھنے کے بعد عوام کا صبر جواب دے گیا اور انہوں نے امام بارگاہ پر حملہ تک کر دیا۔

اس سونے اور جواہر سے جڑے ہوئے منبر پر شیعہ عالم علی طالقانی کی تقریر کی وڈیو سوشل میڈیا پر آئی تو عوام میں زبردست غم و غصہ دیکھا گیا۔

مساجد اور امام بارگاہوں میں عموماً منبر لکڑی، پتھر یا اینٹوں سے بنائے جاتے ہیں جن کے نیچے سیڑھیاں بھی ہوتی ہیں تاکہ عالم، ذاکر یا امام اس پر بیٹھ کر یا کھڑے ہو کر تقریر کر سکے یا خطبہ وغیرہ دے سکے۔ لیکن اس طرح کے منبر شاذ و نادر ہی دیکھے گئے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ صدری تحریک کے حامیوں نے اس امام بارگاہ پر حملہ کر دیا اور اسے زبردستی بند کروا کر منبر کو وہاں سے نکال لیا ہے۔

یہ تحریک عراق کی معروف اسلامی تحریک ہے کہ جسے مقتدیٰ الصدر نے 2003ء میں قائم کیا تھا۔ یہ تحریک عراق کی شیعہ برادری میں کافی مقبول ہے۔

بہرحال، اب تک عراق کے اہم ترین شیعہ رہنما علی سیستانی کی جانب سے اس حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں ہوا۔ خود صدری تحریک نے بھی ابھی تک نہیں بتایا کہ وہ منبر کے ساتھ کیا کرے گی اور سونے اور دیگر قیمتی جواہرات کا مصرف کیا ہوگا۔

سوشل میڈیا پر عوام کا ردعمل بہت شدید تھا۔ ایک صارف نے کہا کہ کیا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ایسے منبر پر بیٹھنا پسند کرتے کہ جو سونے سے بنا ہوا ہو؟ آخر اس منبر پر بیٹھ کر لوگوں کو قناعت، صبر اور نیاز مندی کیسے سکھائی جا سکتی ہے؟ ایک نے طنزاً کہا کہ اس منبر پر بیٹھ کر غریبوں اور ضرورت مندوں کے لیے دعا کی جائے گی جبکہ ایک صارف نے کہا کہ بھوکے کے پیٹ میں ایک لقمہ ایسی ہزاروں مساجد سے بہتر ہے۔

مزید تحاریر

شاخِ زیتون پہ چہکتے گیلے تیتر – احمدحماد

قدیم یونان کے سات دانشمندوں سے ایک کا نام طالیس تھا۔ کہا جاتا ہے کہ یہ طالیس ہی تھا جس نے پہلے پہل یہ...

کورونا کے خاتمے تک قرضوں کی ادائیگی میں رعایت دی جائے، وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عالمی وبا کورونا وائرس کے ختم ہونے تک مقروض ممالک پر قرضہ واپسی کے حوالے سے...

جمعرات کو چاند عین خانہ کعبہ کے اوپر ہوگا

جمعرات 28 جنوری کو سعودی عرب کے مقامی وقت کے مطابق رات 12:43 پر چودہویں کا چاند عین خانہ کعبہ کے اوپر ہوگا۔ جدہ آسٹرونومی...

پاک-جنوبی افریقہ تاریخی ٹیسٹ، پاکستان ان کھلاڑیوں میں سے انتخاب کرے گا

پاک-جنوبی افریقہ تاریخی ٹیسٹ کل یعنی منگل سے کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں شروع ہو رہا ہے۔ پاکستان نے اپنے 20 رکنی ابتدائی اسکواڈ میں...

جواب دیں

اپنا تبصرہ لکھیں
یہاں اپنا نام لکھئے